پی ایم مودی سے ملاقات پر ادھو ٹھاکرے کی وضاحت، میں ہندوستانی وزیراعظم سے ملاقات کےلیے گیاتھا ’نواز شریف ‘سے نہیں : ادھو ٹھاکرے

نئی دہلی: منگل کے روز دہلی میں مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے پی ایم مودی سے ملاقات کی۔ اس دوران انہوں نے مہاراشٹرا کے دوسرے اہم امور پر بھی تبادلہ خیال کیا، جن میں مراٹھا ریزرویشن اور طوفان سے ہونے والے نقصانات قابل ذکر ہیں ۔ ان کے ہمراہ نائب وزیر اعلیٰ اجیت پوار اور وزیر تعمیرات وزیر اشوک چوہان بھی تھے۔ پی ایم مودی سے ملاقات کے بعد ادھو ٹھاکرے نے صاف کہا کہ یہ ایک نجی ملاقات تھی ، کوئی سیاسی میٹنگ نہیں تھی۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ پی ایم مودی کے ساتھ ان کے اچھے تعلقات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہوسکتا ہے کہ ہم سیاسی طور پر ساتھ نہ ہوں ، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہمارے تعلقات خراب ہوگئے ہیں ۔ میں کسی نواز شریف سے ملنے نہیں گیا تھا۔ اگر میں وزیر اعظم سے ذاتی طور پر ملتا ہوں ،تو کوئی اس میں کونسی غلط بات ہے؟۔ خبر کے مطابق ادھو ٹھاکرے نے گذشتہ ماہ وزیر اعظم مودی کو خط لکھا تھا جس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ ریاست میں مراٹھا برادری کو معاشرتی اور تعلیمی طور پر پسماندہ طبقہ قرار دیا جائے، تاکہ انہیں تعلیمی اور سرکاری ملازمت میں بالترتیب 12 فیصد اور 13 فیصد ریزرویشن دیے جانے کی راہ ہموار ہوسکے ۔ اسی دوران وزیر اعظم مودی سے ملاقات کے بعد ادھو ٹھاکرے نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ انہوں نے پی ایم مودی کے ساتھ ریاست کے کئی حساس امور پر تبادلہ خیال کیا ہے اوروزیر اعظم مودی نے ریاست کے مسائل سنے ہیں۔