پپویادونے تیجسوی یادوسے سڑک پراترنے کی اپیل کی،لالویادوپراعتمادکااظہار

پٹنہ: پولیس نے سابق رکن پارلیمنٹ راجیش رنجن عرف پپو یادوکے خلاف کارروائی کی اورجیل بھیج دیا۔پہلے وبائی ایکٹ کی خلاف ورزی کے معاملے میں ، انہیں اپنی رہائش گاہ سے حراست میں لیا گیا تھا اور انھیں گاندھی میدان پولیس اسٹیشن میں رکھاگیا۔رات میں مدھے پورہ کے 32 سالہ پرانے معاملے میںوارنٹ کی بنیاد پرمدھے پورہ پولیس نے انھیں گرفتار کیا اوراپنے ساتھ لے گئی۔ حزب اختلاف کے ساتھ ہی حکومت کے اتحادیوں نے بھی ان کی گرفتاری کے بارے میں احتجاج کیاہے۔ راستے میں پپو یادو نے لالویادو اور تیجسو ی یادوپر اعتماد کااظہارکیاہے۔پٹنہ میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے پپونے کہاہے کہ مجھے بی جے پی کے کہنے پر ایک گہری سازش کے تحت جیل بھیجا جارہا ہے ، جبکہ میں نے پچھلے ڈیڑھ ماہ سے لوگوں کو بچا کر نتیش کمار کی مددکی ہے۔ میں نتیش کمار سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ ہائی کورٹ میں کیس زیر التواء ہونے کے بعد اس معاملے میں کورونا دور میں گرفتاری کی کیا ضرورت تھی؟اس درمیان انھوں نے تیجسوی یادوسے سڑک پراترنے کی اپیل کی ہے جب کہ وہ ابھی بندکمرے میں صرف ٹوئیٹ کررہے ہیں۔بہارکی اہم اپوزیشن پارٹی صرف سوشل میڈیاپرہرمعاملے میںبیان جاری کررہی ہے ۔پپویادونے لالویادوپربھی اعتمادکااظہارکیاہے۔انھوں نے یہ بھی کہاہے کہ میری پوری پارٹی آپ کے ساتھ ہوگی ،آپ سڑک پراترکرلوگوں کی مددکریں۔