پاکستان میں ٹیسٹ سیریز کھیلنے کو تیار نہیں بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم

ڈھاکہ :
پاکستان میں ٹیسٹ میچ نہیں کھیلنے کے اپنے فیصلے پر بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ (بی سی بی) اپنے فیصلہ پر قائم ہے۔بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ نے کہا ہے کہ ان کی ٹیم وہاں ٹی 20 بین الاقوامی میچ کھیلنے کو تیار ہے جبکہ وہ ٹیسٹ سیریز کسی غیر جانبدار مقام پر کھیلنا چاہتے ہیں۔بی سی بی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نظام الدین چودھری نے ایک بار پھر اس مسئلے پر بورڈ کا رخ واضح کیا۔بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کا یہ رخ پاکستان کے لئے بڑا جھٹکا مانا جا رہا ہے۔اس سے پہلے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے صدر احسان منی نے کہا تھا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ان کی ٹیم اب اپنے گھریلو مقابلوں کو ملک میں ہی کھیلے گی۔نظام الدین کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ہم اپنے موقف پر قائم ہیں۔ہم پاکستان میں صرف ٹی 20 کھیلنا چاہتے ہیں۔سیریز سے متعلقہ اسٹیک ہولڈر نہیں چاہتے ہیں کہ ہم پاکستان میں سب سے طویل فارمیٹ کی کرکٹ کھیلے۔ انہوں نے کہاکہ بے شک ہمارے پاس اس کے علاوہ کوئی اور چارہ نہیں ہے۔ہم ٹی 20 بین الاقوامی کھیل سکتے ہیں لیکن ٹیسٹ کا انعقاد غیر جانبدار مقام پر ہونا چاہئے۔اس دوران پی سی بی سربراہ احسان منی نے بی سی بی کو ای میل بھیج کر ٹیم کو پاکستان بھیجنے سے انکار کرنے کے لئے قابل قبول وجہ دینے کو کہا۔دو میچوں کی یہ ٹیسٹ سیریز 18 جنوری سے شروع ہوگی جو آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چمپئن شپ کا حصہ ہے۔ بنگلہ دیش بورڈ کے اعلی حکام نے اس ہفتے میڈیا سے کہا تھا کہ وہ سیکورٹی خدشات کی وجہ سے پاکستان میں ٹیسٹ نہیں کھیلیں گے ۔ٹیسٹ سیریز کے لئے سری لنکا کی میزبانی کرنے کے بعد مانی نے کہا تھا کہ پاکستان اب محفوظ ہے۔سری لنکا کی ٹیم پر 2009 میں ہوئی دہشت گردانہ حملے کے بعد پاکستان میں یہ پہلی ٹیسٹ سیریز تھی۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*