آکسیجن بحران مودی سرکارکی ناکامی، جب ضرورت تھی توبرآمد کیوں کیا؟،کانگریس کا سوال

نئی دہلی:آکسیجن کی کمی کے مسئلے نے حکومت ہرطرف سے نشانہ بن گئی ہے۔کانگریس نے مودی سرکار کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے آکسیجن کی کمی پر ایک بار پھر ناراضگی ظاہرکی ہے۔ کانگریس کے رہنما اجے ماکن نے ایک پریس کانفرنس میں کہاہے کہ کل وزیر اعظم مودی کی تقریر مکمل طور پربے ضابطہ تھی ۔ انہوں نے کہاہے کہ جب ملک میں آکسیجن کی ضرورت تھی تو آکسیجن کیوں برآمد کی جارہی تھی۔ یہ حکومت کی ناکامی ہے ، قدرتی آفت نہیں۔ کانگریس نے سوال کیاہے کہ آیا یہ پندرہ مہینے ہیں لیکن کوئی حکمت عملی تیار نہیں کی۔ اجے ماکن نے کہاہے کہ مودی حکومت اس وبا کے اس مرحلے میں انتخابات میں مصروف تھی۔ انہوں نے کہا کہ اب حکومت سے درخواست ہے کہ الیکشن وغیرہ کومئوخر کیاجائے۔ اس کے علاوہ کانگریس نے ویکسین کی قیمتوں کے اعلان پر بھی سوالات اٹھائے تھے۔ کانگریس کے مطابق ریاستوں کے لیے ویکسین کی لاگت میں اضافہ کرکے حکومت ریاستوں پر مالی بوجھ ڈال رہی ہے۔ ریاستوں کو یہ پیسہ کہاں سے ملے گا؟ ایک تاریخ کے بعد ، ویکسین پر افراتفری کا ماحول ہو گا۔ انہوں نے کہاہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ ایک ملک میں ویکسین پر قیمتوں کا نظام موجود ہو۔ اسی کے ساتھ ہی ، کانگریس نے بھی اپیل کی ہے کہ وہ غریب مزدوروں کے لیے چھ ہزار ماہانہ دے۔