یوپی اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتاری پر اویسی کا سخت اعتراض : اگر عدلیہ الزامات سے بری قرار دیتی ہے تو حکومت کے پاس کیا جواب ہوگا؟

سنبھل ؍لکھنؤ: آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے قومی صدراور ایم پی بیرسٹر اسدالدین اویسی نے اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتار کئے گئے ملزمان کے دفاع میں حکومت پر سوالات اٹھائے ہیں ۔ انہوں نے اس سلسلے میں کہا کہ اگر عدالت ان تمام ملزمان کو بری کردیتی ہے توپھر حکومت اس سلسلے میں کیا جواب دے گی؟جمعرات کو ایس پی کے رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر شفیق الرحمن برق کے انتخابی حلقے میں پہنچے اسدالدین اویسی نے بی جے پی پر سخت حملے کئے ۔ انہوں نے کورونا سے ہونے والی اموات پر مرکزی حکومت پر سخت تنقید کی اور کہا کہ کرونا میں لاکھوں افراد ہلاک ہوئے ، لیکن پی ایم مودی کے منہ سے ایک لفظ بھی نہیں نکلا ۔ اویسی نے یوپی حکومت کے ذریعہ لائے گئے آبادی کنٹرول قانون پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ حکومت آبادی کنٹرول قانون لا کر عوام کو کمزور کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے پاس کوئی مسئلہ نہیں بچا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے نئے حربے اختیارکر رہی ہے۔ انہوں نے یوپی اے ٹی ایس کی جانب سے کی گئی کارروائی کے حوالے سے بھی حکومت کا گھیراؤ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر عدالت ان تمام ملزمان کو بری کردیتی ہے تو حکومت کیا جواب دے گی۔