نتیش کمار کے وزیر نے کہا، کرپٹ ہے ہماری حکومت

پٹنہ: بہار میں وزیر اعلی نتیش کمار کی سیاسی مشکلات میں اضافہ اپوزیشن نہیں بلکہ ان کی پارٹی کے وزرا اور ممبران اسمبلی کررہے ہیں۔ نتیش حکومت کے ایک سینئر وزیر مدن سہنی نے عہدیداروں کی من مانی سے تنگ آکر مستعفی ہونے کی پیش کش کی ہے۔ سہنی نے عوامی طور پر کہا کہ ان کے اپنے محکمہ میں چاہے وہ پرنسپل سکریٹری ہوں یاچپراسی کوئی ان کی نہیںسنتا۔ مدن سہنی فی الحال دربھنگہ گئے ہیں اور انہوں نے ہفتہ کو واپس آنے کے بعد استعفیٰ دینے کا اعلان کیاہے۔یہ خیال کیا جاتا ہے کہ محکمہ کے پرنسپل سکریٹری نے 134 چائلڈ ڈویلپمنٹ پروجیکٹ افسران کے تبادلے کے سلسلے میں مدن سہنی کی سفارش کو نظرانداز کیاہے ، اب اس کے بارے میں کوئی حل نکالا جارہا ہے۔ استعفیٰ کے ساتھ سہنی نے یہ بھی واضح کیا کہ وہ پارٹی چھوڑیں گے نہیں۔لیکن یہ خیال کیا جاتا ہے کہ بہت سے وزراء جو تبادلے میں اپنی من مانی نہیں کرسکے اب انہوں نے محکمہ کے سکریٹری کے خلاف آواز اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ سابق وزیر اعلی جتن رام مانجھی بھی سہنی کے حق میں ہیں اور کہا کہ انہوں نے ماضی میں این ڈی اے کی مقننہ کمیٹی میں یہ چیزیں اٹھائی ہیں اور جب تک افسران ایم ایل اے اور وزیروں کا احترام نہیں کریں گے عدم اطمینان بڑھتا جائے گا۔