قومی اردو کونسلNEET کی تیاری کے لیے اردو میں جامع اور مفید کتابیں شائع کرے گی:ڈاکٹر عقیل احمد

بایولوجی ،کیمسٹری اور فیزکس پراردو زبان میں مواد کی فراہمی وترتیب کے سلسلے میں ورکشاپ کا انعقاد

نئی دہلی:میڈیکل کورسز میں داخلے کے خواہش مند طلبا و طالبات کے لیے قومی سطح پر منعقد ہونے والے نیٹ (NEET) امتحانات کے لیے اردو میں مواد کی فراہمی کے سلسلے میں قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کی جانب سے ایک ورکشاپ کا انعقاد کیاگیا،جس میں اس حوالے سے بایولوجی،کیمسٹری اور فیزکس پر طلبا کے لیے مفید کتابیں مرتب کرنے پر غور و خوض کیاگیا۔ اس موقعے پر کونسل کے ڈائریکٹر شیخ عقیل احمد نے کہا کہ بہت سے طلبا جو اردو میڈیم سے تعلیم حاصل کرتے ہیں اور وہ مستقبل میں ڈاکٹری کے شعبے میں جانا چاہتے ہیں انھیں نیٹ کے امتحانات کی تیاری میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے جنھیں دور کرنے کے لیے ہم نے فیصلہ کیاہے کہ کونسل کی جانب سے ایک ایسا جامع نصاب مرتب کیا جائے جو ‘نیٹ’ کی تیاری میں اردو طلبا کے لیے معاون ہو اور اس کی مدد سے وہ ان امتحانات میں کامیابی حاصل کرکے میڈکل کورسز میں داخلہ لے سکیں۔انھوں نے کہاکہ قومی اردو کونسل نہ صرف اردو زبان و ادب کے فروغ کے لیے مختلف قسم کی سرگرمیاں انجام دیتی ہے بلکہ اس کا ایک خاص مقصد یہ بھی ہے کہ اردو طلبا کو جدید تکنیکی تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے ساتھ اردو زبان و ادب کے علاوہ ان کی خواہش کے مطابق دیگر علمی شعبوں میں بھی ان کی رہنمائی کی جائے اور اس سلسلے میں ان کی ہر قسم کی علمی وعملی مدد کی جائے تاکہ ان کا مستقبل روشن و محفوظ ہوسکے اور وہ قوم وملک کے لیے زیادہ سے زیادہ مفید و کار آمد ثابت ہوسکیں۔ اسی مقصد کے پیش نظر کونسل کی جانب سے اردو کے علاوہ عربی،فارسی،خطاطی اور کمپیوٹرکے مختلف کورسز کروائے جاتے ہیں اور اب ہم طلبا کی ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے کونسل کی جانب سے ‘نیٹ’ کی تیاری کے لیے بھی کتابیں شائع کرنے کا منصوبہ بنارہے ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ اس ورکشاپ میں شرکا نے بایولوجی اور کیمسٹری پر تیار شدہ مواد کو دیکھنے کے بعد اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے اس کو مزید بہتر بنانے کے امکانات کی نشان دہی کی اور کہا کہ بقیہ مواد بھی جلد ازجلد مرتب کرواکے گہرائی سے جائزہ لینے کے بعد اس کی اشاعت کا فیصلہ کیا جائے گا۔اس ورکشاپ میں پروفیسرمشاہدحسین، پروفیسر تسنیم فاطمہ، پروفیسرجسیم احمد، ڈاکٹر عطاءالرحمن، محترمہ شمع کوثر یزدانی (اسسٹنٹ ڈائریکٹر اکیڈمک)، ڈاکٹر فیروز عالم (اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر) اور محترمہ ذیشان فاطمہ (ریسرچ اسسٹنٹ) شریک رہے۔