ملک میں 2 بچوں کیلئے جبرا قانون کی ضرورت نہیں، قومی سطح پر اس طرح کے اقدام کی مخالفت کریں گے: جے رام رمیش

 

نئی دہلی: سینئر کانگریسی لیڈر جے رام رمیش نے اتوار کے روز کہا کہ سرکاری فوائد اور انتخابات لڑنے کے مقصد کے لئے ملک میں دو بچوں کو لازمی یا زبردستی قانون لانے کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر مرکزی حکومت کی سطح پر اس طرح کا کوئی اقدام ہوتا ہے تو ان کی پارٹی اس کی مخالفت کرے گی۔ ساتھ ہی انہوں نے بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار کے اس بیان کی حمایت کی کہ آبادی پر قابو پانے کے لئے قانون سے زیادہ موثر اقدام لڑکیوں کو تعلیم دینا ہے۔آبادی کنٹرول بل کے مسودے کو بی جے پی کاتفرقہ انگیز ایجنڈے کا حصہ قراردیتے ہوئے سابق مرکزی وزیر نے کہا کہ اس معاملے کو زندہ رکھنے کے لئے آبادی پر قابو پانے والی 28 غیر سرکاری بل پچھلے دو دہائیوں پارلیمنٹ میں پیش کئے گئے۔یہ ایک سیاسی کھیل ہے جو بی جے پی کے ذریعہ فرقہ وارانہ تعصب اور جذبات کو بھڑکانے کے لئے کھیلا جارہا ہے۔