مفتی فضیل الرحمن ہلال عثمانی کے انتقال پر اظہار تعزیت

پھلواری شریف :
امارت شرعیہ بہار اڈیشہ وجھارکھنڈ کے قائم مقام ناظم مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نے حضرت مولا نا مفتی فضیل الرحمن ہلال عثمانی کے انتقال پر ملال پر گہرے غم و صدمہ کا اظہار کیا ہے ،انہوں نے کہا کہ مفتی صاحب کا خانوادہ پانچ پشتوں سے دینی علمی خدمات میں مشغول رہا ہے ،مفتی صاحب علیہ الرحمہ کے پر دادا حضرت مولانا مفتی عزیزالرحمن صاحب دارالعلوم دیوبند کے مفتی اعظم تھے ،مفتی صاحب علیہ الرحمہ کے بھائی مفتی کفیل الرحمن نشاط ہم لوگوں کے استاذ بھی تھے اور زمانہ دراز تک انہوں نے دارالافتاء میں خدمات انجام دیں ،خود مفتی فضیل الرحمن نے پنجاب کے مالیر کوٹلہ میں عرصہ دراز تک علمی ودینی چراغ روشن رکھا ،اور وہاں سے لوٹنے کے بعد وہ دارلعلوم وقف دیوبند کے صدر مفتی کی حیثیت سے بڑی مفید خدمت انجام دے رہے تھے کہ اللہ رب العزت نے انہیں اپنے پاس بلا لیا ، مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نے فرمایا کہ اس دور قحط الرجال میں مفتی صاحب کا ہم سب سے جدا ہوجانا بڑا ملی خسارہ ہے ،اللہ رب العزت حضرت کی مغفرت فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل دے ۔قائم مقام ناظم امارت شرعیہ نے امارت پبلک اسکول گریڈیہہ و رانچی کے ذمہ دار مولانا ابوالکلام شمسی کے بھائی کے انتقال پر بھی دلی صدمہ کا اظہار کیا ،مرحوم کے لئے مغفرت اور پس ماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی، اس سلسلہ میں باقاعدہ تعزیتی نشست ۷؍ دسمبر کو امارت شرعیہ میں رکھی گئی ہے۔