ایم پی:شیوراج حکومت کےخلاف اتریں اوما بھارتی،8 مارچ سے صوبہ میں شراب پر پابندی کے لیے چلائیں گی خصوصی مہم

بھوپال:سابق وزیر اعلیٰ اوما بھارتی نے شیوراج حکومت کو گھیر ا ہے ، جس نے شراب کی نئی دکانیں کھولنے کی تجویز پیش کی ہے ۔ اوما بھارتی کے احتجاج کے بعد حکومت کو اس تجویز کو منسوخ کرنا پڑا۔ اب ایک اور قدم اٹھاتے ہوئے سابق سی ایم اومابھارتی نے شراب بندی کی مہم کی تیاری کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 8 مارچ کو یوم خواتین کے موقع پر وہ شراب بندی کی مہم شروع کریں گی۔ اس کی نوعیت کیا ہوگی ، اگلے پانچ دن میں اس کی وضاحت ہوجائے گی۔ اوما بھارتی کے اعلان سے شیوراج حکومت کی تشویش میں اضافہ یقینی ہے۔یادر ہے کہ حکومت سال 2021-22 کے لیے جلد شراب کی نئی پالیسی پر عمل درآمد کرنے کی تیاری کر رہی ہے ، لیکن اس سے پہلے ہی ریاست میں سیاسی ابال آچکا ہے۔سابق وزیر اعلی نے سوشل میڈیا پر لکھا کہ شراب اور منشیات کے خلاف مہم سازی میں مجھے اپنا ساتھی مل گیا ہے۔ خوشبو نامی یہ لڑکی مدھیہ پردیش کی ہے اور وہ اتراکھنڈ میں میری گنگا قیام میں شرکت کے لیے آئی تھی ۔ میں نے گنگا سے کہا ہے کہ وہ 8 مارچ 2021 کو یوم خواتین کے موقع پر شراب اور منشیات کیخلاف مہم کے لئے تیاری کریں،وہ آپ کو مزید تفصیلات 5 دن کے بعد بتائے گی۔وزیر داخلہ نروتم مشرا کے مدھیہ پردیش میں شراب کی نئی دکانیں کھولنے کے تعلق بیان کے بعد ہی انھوں نے اشارہ دیا تھا کہ وہ شراب پر پابندی سے متعلق مہم شروع کریں گی۔ گزشتہ دنوں انہوں نے کہا تھا کہ منشیات کی وجہ سے ہی عصمت دری کے واقعات بڑھ رہے ہیں ، لہٰذا منشیات اور شراب پر پابندی لگائی جانی چاہیے،ایسا فیصلہ کرنے کے لیے سیاسی ہمت کی بھی ضرورت ہے۔