مولاناکلب صادق اورجناب احمدپٹیل کے انتقال پر امارت شرعیہ میں تعزیتی نشست

پٹنہ:برصغیر ہندکے نامور،شیعہ عالم دین،آل انڈیامسلم پرسنل لابورڈ کے نائب صدر مولاناڈاکٹرسید محمد کلب صادق صاحب اورکانگریس کے قدآوراورمضبوط رہنما جناب احمد پٹیل کے سانحہ ارتحال پر دفتر امارت شرعیہ پھلواری شریف پٹنہ میں تعزیتی نشست زیرصدارت قائم مقام ناظم امارت شرعیہ مولانامحمدشبلی القاسمی صاحب منعقد ہوئی،جس میں اظہار تعزیت کرتے ہوئے صدارتی خطاب میں مولانامحمدشبلی القاسمی صاحب نے فرمایاکہ مولانااتحادامت کے بہت بڑے علمبردار تھے،بلکہ وہ شیعہ سنی اتحاد کی علامت بن چکے تھے،مختلف مسالک کے درمیان مذہبی رواداری اورہم آہنگی کوفروغ دینے کے لئے جدوجہدکرتے رہتے تھے،صالح فکر اورمثبت صلاحیتوں کے مالک تھے اورزندگی کا ہرحصہ اتحاد امت کے لئے صرف کیا،خدمت اورتعلیم کے میدان میں بھی انہوں نے بڑے کارنامے انجام دیئے،اللہ ان کی مغفرت فرمائے ،ان کے درجات کو بلند فرمائے۔انہوں نے کہاکہ جناب احمدپٹیل صاحب نے بھی درمفارقت دے دی،وہ کانگریس پارٹی کے اہم ذمہ دارتھے،ان کے انتقال سے کانگریس کے ایک عہدکاخاتمہ ہوگیا،ان دونوں حضرات کی ہم سب کے مخدوم ومربی امیر شریعت مفکراسلام حضرت مولاناسید محمد ولی رحمانی صاحب سے گہرے مراسم اوردیرینہ تعلقات تھے،داغ مفارقت پانے والے دونوں شخصیات کی امارت شرعیہ سے بھی مضبوط وابستگی تھی ،یہ دونوں حضرات کی دفتر امارت شرعیہ میں بھی حاضری ہوتی رہی ہے۔،اللہ ان کی بھی مغفرت فرمائے اورامت کو نعم البدل عطاکرے۔مولاناسہیل احمد ندوی نائب ناظم امارت شرعیہ نے کہاکہ مولانا ڈاکٹر کلب صادق صاحب سے ۱۹۸۵ء سے راہ ورسم رہے ہیں،ان کے اندر انسانیت کی بنیادپر خدمت کا بے پناہ جذبہ تھاجس کا میں نے مشاہدہ بھی کیاہے،ان کا اٹھ جانا ایک بڑا سانحہ ہے۔مولانامفتی سعیدالرحمن صاحب قاسمی مفتی امارت شرعیہ نے کہاکہ مولانااتحاد کے بہت بڑے داعی تھے،اپنی تقریروں میں اتحاد کا پیغام دیتے اورلوگوں کو آپس میں مل جل کر زندگی گذارنے کی تلقین کرتے۔مولانامفتی وصی احمد قاسمی صاحب نائب قاضی شریعت امارت شرعیہ نے کہاکہ مولانا نے ملت کی مختلف جہات سے خدمات انجام دیں،بین المذاہب والمسالک اتحاد کو فروغ دینے کی ہمہ تن جدوجہد کرتے رہے،تعلیم کے میدان میں مسلم نوجوانوں کو آگے بڑھانے اورترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن کرنے کے لئے ہمیشہ فکر مند رہے۔انہوں نے کہاکہ ملک کے سیاسی لیڈراحمدپٹیل صاحب کا وصال بھی ایک بڑا سانحہ ہے،ان کے اندر سیاسی شعور کوٹ کوٹ کے بھرا ہواتھااللہ ان کی بھی مغفرت فرمائے۔ مولانا سہیل اختر قاسمی نائب قاضی شرعیہ نے کہاکہ دونوں مرحومین ملک اورقوم کے قیمتی اثاثہ تھے ،اللہ ان دونوں کے درجات کو بلند کرے۔مولانارضوان احمد ندوی صاحب نے کہاکہ مولاناکلب صادق صاحب اپنے مسلک کے ممتازپیشوااورنامور خطیب ومقرر تھے،ان کی گفتگو حکمت وموعظت سے لبریز ہوتی تھی،مختصر جملوں میں بہت سی قیمتی باتیں کہ دیتے جس سے لوگ متاثر ہوئے بغیر نہ رہتے۔امارت شرعیہ اوریہاں کے اکابر سے یک گونا قلبی لگائوبھی تھا،بلاشبہ ان کے انتقال سے ایک بڑا خلاپیدا ہواہے۔آخر میں قائم مقام ناظم مولانا محمدشبلی القاسمی صاحب نے ان دونوں مرحومین کے لئے اجتماعی طورپر دعائے مغفرت کرائی۔اس نشست میں امارت شرعیہ کے جملہ عہدیداران وکارکنان نے شرکت کی۔