مودی پھر بولے: کسانوں کو گمراہ کیاگیا،ہم خدشات دورکریں گے

 

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے گجرات کے کچھ میں ایک تقریب کے دوران کسانوں کی جانب سے زرعی قوانین کے خلاف کیے جارہے احتجاج پر اپوزیشن کو نشانہ بنایا۔انھوں نے کہا کہ کسانوں کو الجھانے کی سازش جاری ہے۔ انہیں خوف زدہ کیاجارہاہے کہ نئی زرعی اصلاحات کے بعد وہ کسانوں کی اراضی پر قبضہ کرلیں گے۔ آپ مجھے بتائیں ، اگر کوئی شخص آپ سے دودھ لینے کا معاہدہ کرتا ہے تو کیا وہ آپ کا جانورلے جاتا ہے؟ ملک پوچھ رہا ہے کہ اناج اور دالیں تیار کرنے والے چھوٹے کاشتکاروں کو فصلیں بیچنے کی آزادی کیوں نہیں ملنی چاہیے؟وزیر اعظم مودی نے کہا ہے کہ زرعی اصلاحات کا مطالبہ برسوں سے کیا جارہا تھا۔ بہت سی کسان تنظیموں نے پہلے ہی مطالبہ کیا کہ کہیں بھی اناج فروخت کرنے کا آپشن موجود ہے۔ آج جوحزب اختلاف میں بیٹھ کر کسانوں کو الجھا رہے ہیں ، وہ بھی اپنے وقت میں ان اصلاحات کی حمایت کرتے رہے ہیں۔ وہ صرف کسانوں کو جھوٹی تسلی دیتے رہے۔ جب ملک نے یہ قدم اٹھایا ہے تو وہ اب کسانوں کو الجھا رہے ہیں۔