مودی کی من کی بات، گرونانک کے بہانے کسانوں کورِجھانے کی کوشش

نئی ہلی:پی ایم مودی نے من کی بات پروگرام میں کہاہے کہ میں ایک اچھی خبر سنارہا ہوں۔ اننا پورن دیوی کے مجسمہ کوکینیڈاسے واپس لایا جائے گا۔میں اس کے لیے کینیڈا کی حکومت کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ پی ایم مودی نے من کی بات پروگرام میں کہاہے کہ آج میں آپ سب کے ساتھ ایک اچھی خبر شیئرکرناچاہتا ہوں۔ ہر ہندوستانی کو یہ جان کر فخر ہوگا کہ انی پورن دیوی کا بہت پرانامجسمہ کینیڈا سے ہندوستان واپس آرہا ہے۔ اننپورناکاکاشی کے ساتھ بہت خاص رشتہ رکھتے ہیں۔ اب ان کے مجسمہ کی واپسی ہم سب کے لیے خوشگوارہے۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ انناپورنا کے مجسمے کی واپسی سے بھی وابستہ ہے کہ یوم عالمی ورثہ چند دن پہلے منایا گیا ہے۔پی ایم مودی نے کہا کہ آج ملک میں بہت سارے عجائب گھر اور لائبریریاں مکمل طورپرڈیجیٹل بنانے کے لیے کام کر رہی ہیں۔ دہلی میں ہمارے قومی میوزیم نے اس سلسلے میں کچھ قابل ستائش کوششیں کیں۔وزیراعظم نے کہاہے کہ ڈاکٹرسلیم علی جی کے 125 ویں یوم پیدائش تقریبات رواں ماہ 12 نومبرسے شروع ہوئیں۔ڈاکٹر سلیم نے پرندوں کی دنیامیں ایک قابل ذکر کام کیا ہے۔ دنیا میں برڈ واچنگ نے بھی ہندوستان کو اپنی طرف متوجہ کیا۔ بھارت میں پرندوں کو دیکھنے کی بہت سی سوسائٹییں سرگرم ہیں۔ وزیر اعظم نے لوگوں سے اپیل کی کہ آپ بھی لازمی طور پر اس موضوع میں شامل ہوں۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ اپنی بھاگ دوڑ کی زندگی میں ، مجھے کیوڈیا میں پرندوں کے ساتھ وقت گزارنے کا ایک بہت ہی یادگار موقع بھی ملا۔ ہندوستان کی ثقافت اورصحیفے پوری دنیاکے لیے ہمیشہ ہی توجہ کا مرکزرہے ہیں۔ بہت سارے لوگ ان کی تلاش میں ہندوستان آئے اورہمیشہ کے لیے یہاں ٹھہرے ، بہت سارے لوگ اپنے ملک واپس چلے گئے اور اس ثقافت کے موجد بن گئے۔وزیر اعظم نے کہاہے کہ کل 30 نومبر کو ہم شری گرو نانک دیو جی کے 551 ویں پرکاش پرو منائیں گے۔ گرو نانک دیوکااثرپوری دنیا میں واضح طور پر نظر آتا ہے۔گروگرنتھ صاحب میں کہا گیا ہے کہ بندے کاکام خدمت کرنا ہے۔ پچھلے کچھ سالوں میں بہت سارے اہم سنگ میل آئے اور ایک خدمت گارکی حیثیت سے ہمیں بہت کچھ کرنے کا موقع ملا۔ کیاآپ جانتے ہیں کہ کچھ میں ایک گرودوارہ ہے۔ 2001 کے زلزلے سے کچھ کے لکھپت گوردوارہ صاحب کو بھی نقصان پہنچا تھا۔یہ گرو صاحب کا کرم تھا کہ میں اس کی بحالی یقینی بنانے کے قابل تھا۔وزیر اعظم مودی نے زرعی قوانین کے بارے میں کہاہے کہ اس سے کسانوں کے لیے نئی راہیں کھل گئیں۔ کافی غور و فکر کے بعد ہندوستانی پارلیمنٹ نے زرعی قوانین کو ٹھوس شکل دی۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ بہت غور وفکرکے بعد ہندوستان کی پارلیمنٹ نے زرعی اصلاحات کوقانونی شکل دی۔ ان اصلاحات نے نہ صرف کسانوں کے بہت سے بندھن ختم کردیے ہیں ، بلکہ انہیں نئے حقوق ، نئے مواقع بھی ملے ہیں۔