مودی بہارالیکشن کے لیے فوج کی بہادری کااستعمال کررہے ہیں:شیوسینا

ممبئی:شیوسینانے وزیر اعظم نریندر مودی پر الزام عائدکیاہے کہ وہ بہاراسمبلی انتخابات کے لیے وادی گلوان کی جدوجہدمیں بھارتی فوجیوں کے ذریعہ دکھائی جانے والی بہادری کا استعمال کررہے ہیں۔مہاراشٹر میں مخلوط حکومت کی سرکردہ جماعت نے الزام لگایا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ 15 جون کو لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی) پرچینی فوج کے ساتھ جھڑپ میں شامل ایک خصوصی فوجی ریجمنٹ کاحوالہ دے کر مودی ’نسلی اور علاقائی کارڈ‘‘کھیل رہے ہیں۔شیو سینا کے ترجمان ’’سامنا ‘‘نے اپنے اداریہ میں یہ بات مودی کے وادی گلوان تنازعہ میں بہار ریجمنٹ کی بہادری سے متعلق بیان کے حوالہ سے یہ بات کہی ہے ۔نیز یہ بھی کہاہے کہ جب ملک سرحد پر بحران کا سامنا کر رہا ہوتاہے ،توکیا سرحدوں پر بیٹھے مہار ، مراٹھا ، راجپوت ، سکھ ، گورکھا بیکار بیٹھے تمباکو چبا رہے تھے؟ ایسی سیاست کورونا سے زیادہ مہلک ہے۔انہوں نے کہاہے کہ مہاراشٹر سے تعلق رکھنے والے ایک سی آر پی ایف جوان سنیل کالے کل پلوامہ میں دہشت گردوں کے ساتھ مقابلے میں ہلاک ہوگئے تھے۔ آئندہ انتخابات کے پیش نظر ، ہندوستانی فوج میں ذات پات اور خطے کو اہمیت دی گئی تھی۔ایک اداریے میں ، بی جے پی کے سابق اتحادی نے اس طرح کی سیاست کی مخالفت کی تھی۔ اداریے میں کہاگیاہے کہ اس قسم کی سیاست ایک بیماری ہے ، جو کورونا وائرس سے زیادہ مہلک ہے۔اس سال کے آخر میں بہار میں اسمبلی انتخابات ہوں گے۔ بی جے پی وہاں کے حکمران اتحادمیں شامل ہے۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*