میں روزانہ گائے کاپیشاب پیتی ہوں اس لیے کورونا نہیں ہوا:سادھوی پرگیہ ٹھاکر

بھوپال: مدھیہ پردیش کے بھوپال سے بی جے پی کی متنازعہ رکن پارلیمنٹ پرگیہ ٹھاکرنے ایک بار پھر عجیب و غریب بیان دیاہے۔انہوں نے ایک پروگرام میں کہاہے کہ دیسی گائے کا گائے پیشاب پھیپھڑوں کی بیماری کو دور کرتا ہے۔ان سے پہلے گجرات اوریوپی میں فنگرس کے کیس آئے ہیں جہاں کچھ لوگوں نے گئوشالہ سے گائے کاگوبراستعمال کیاہے۔ڈاکٹروں نے تنبیہ بھی کی ہے ۔پرگیہ سنگھ ٹھاکرگوڈسے کی تعریف کرچکی ہیں جس کے لیے ابھی تک ان کودل سے معاف نہیں کیاگیاہے۔وہ دھماکے معاملے میں بھی ملزمہ ہیں۔ان پرعدالت میں کیس چل رہاہے۔پرگیہ ٹھاکر نے کہا ہے کہ میں روزانہ گائے کا پیشاب پیتی ہوں جس کی وجہ سے میں کورونا سے متاثر نہیں ہوئی اور اب تک میں اس بیماری سے بچی ہوئی ہوں۔سوشل میڈیاپرانھیں مشورہ دیاجارہاہے کہ وہ یہ مشورہ بی جے پی کے دوسرے لیڈران کوکیوں نہیں دیتیں جومتاثرہورہے ہیں۔یاد رہے کہ ڈاکٹرنے کورونا میں گائے پیشاب نہ کھانے کا مشورہ دیا ہے۔بھوپال میں اتوار کی شام کو منعقدہ ایک پروگرام میں پرگیہ سنگھ ٹھاکر نے کہاہے کہ کچھ لوگ مجھے بتا رہے ہیں کہ میں غائب ہوں جب میں لوگوں کی خدمت کر رہی ہوں۔ اپوزیشن پارٹی دعویٰ کررہی ہے کہ بحران کے وقت پرگیہ ٹھاکر غائب ہوگئی ہیں۔پرگیہ سنگھ ٹھاکر نے دو سال قبل دعویٰ کیاہے کہ گائے پیشاب کے استعمال سے کینسر ٹھیک ہوتا ہے۔