میرٹھ میں 76بی جے پی لیڈروں کو ہوم کورنٹائن کا نوٹس

میرٹھ:اتر پردیش کے میرٹھ میں بھارتیہ جنتا پارٹی لیڈروں کو ہوم کورنٹائن کو لے کر نوٹس بھیجا گیا ہے۔ موجودہ کونسلر، سابق کونسلر سمیت شہر کے 76 پارٹی لیڈروں کو کوارنٹائن کا نوٹس ملا ہے۔ دراصل ایک بی جے پی لیڈر کے والد اور بھائی کی کرونا وائرس کی رپورٹ مثبت آنے کے بعد یہ کارروائی کی گئی ہے۔ اس دوران نوٹس دینے میں بھی محکمہ صحت کی غفلت سامنے آئی ہے۔ کیس کے انکشاف کے 10 دن بعد بی جے پی لیڈروں کو نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔واضح رہے کہ اتر پردیش میں کرونا وائرسکے سب سے زیادہ کیس آگرہ میں سامنے آئے ہیں۔گزشتہ جمعرات کوکرونا وائرس کے 22 نئے کیس سامنے آئے، جس سے یہاں ان کی کل تعداد بڑھ کر 455 ہو گئی۔ ان میں سے 14 لوگوں کی موت ہو چکی ہے، وہیں 98 مریض ٹھیک ہو کر گھر لوٹ چکے ہیں۔ محکمہ صحت کے حکام نے یہ معلومات دی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ جو نئے کیس سامنے آئے ہیں، وہ قریبی شخص سے انفیکشن کا شکار ہوئے ہیں۔ گزشتہ بدھ کوایک پولیس اہلکار کے متاثر ہونے کی تصدیق ہونے کے بعد ان کے ساتھ کے تین دیگر سپاہیوں اور قریبی لوگوں الگ جگہ میں بھیج دیا گیا ہے۔ اس دوران آگرہ کے 11 ہاٹ اسپاٹ علاقے اب گرین زون میں شامل ہو گئے ہیں۔ گرین زون میں عام لاک ڈاؤن کے قوانین نافذرہیں گے۔11ہاٹ اسپاٹ علاقوں میں گزشتہ 28 دن میں کوئی نیا معاملہ سامنے نہیں آنے پر یہ ہہاٹ اسپاٹ علاقہ اب گرین زون میں بدل گیا۔ریاست میں گزشتہ جمعرات کو کرونا وائرس سے متاثر ہ افراد کی تعداد 2211 ہو گئی تھی۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے ہدایت کی ہے کہ تقریبا 10 لاکھ لوگوں کے لئے فوری طور پر الگ مرکزتیار کئے جائیں، جہاں آنے والے مہاجر مزدوروں کو فوری طور پر رکھا جا سکے۔ محکمہ صحت کی جانب سے گزشتہ شام جاری بلیٹن میں بتایا گیا کہ کرونا وائرس سے متاثر ہ افراد کی تعداد 2211 ہے اورتک کل 77 نئے کیس سامنے آئے۔