مولانا محمود مدنی جمعیت علمائے ہند(م) کے قومی صدر منتخب

نئی دہلی:مولانا قاری سید عثمان منصور پوری کے انتقال کے بعد جمعیت علماے ہند کے نئے صدر کے سلسلے میں کی جانے والی تمام قیاس آرائیاں آج ختم ہوگئیں اور دہلی میں جمعیۃ علماء ہند کے صدر دفتر میں منعقدہ عاملہ کی میٹنگ میں جمعیت علمائے ہند کے نئے صدر کے طورپر سابق رکن پارلیمنٹ(راجیہ سبھا) اور جمعیت علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا سیدمحمود مدنی کو متفقہ طور پر جمعیت علمائے ہند کا قومی صدر منتخب کیا گیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ 21 مئی 2021 کو جمعیت علماء ہند کے قومی صدرمولانا قاری سید عثمان منصورپوری کا تقریبا دوہفتے کی علالت کے بعد گڑگاؤں کے میدانتا اسپتال کا انتقال ہوگیا تھا۔ان کی وفات کے بعد سے جمعیت علماء ہند کے نئے قومی صدر کے سلسلے میں چہ میگوئیاں جاری تھیں،بعض حلقوں کی طرف سے یہ بھی قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں کہ اب جمعیت کے دونوں گروپ متحد ہوجائیں گے اور متفقہ طورپر مولانا سید ارشد مدنی کو صدر اور مولانا محمود مدنی کو جنرل سکریٹری بنایا جائے گا،مگر آج صبح معاملہ صاف ہوگیا اور یہ طے ہوگیا کہ جمعیتیں دو ہی رہیں گی اور دونوں سرگرم رہیں گی۔ آج دہلی میں جمعیت علماء ہند کے مرکزی دفتر واقع مسجد عبدالنبی،آئی ٹی او میں مجلس عاملہ کے ایک اجلاس میں مولانا محمود مدنی کو متفقہ طور پر قومی صدر منتخب کیا گیا ہے۔ کورونا کی وجہ سے بہت سے ممبران آن لائن اس میٹنگ میں شامل تھے۔ مولانا حکیم الدین قاسمی جمعیت علماء ہند کے جنرل سکریٹری منتخب ہوئے ہیں،اس سے قبل وہ سکریٹری کے عہدے پر فائز تھے۔ جمعیت کے آفشیل ٹوئٹر ہینڈل کے ذریعے یہ اطلاع دی گئی ہے۔