مولانا سید ارشد مدنی پانچویں امیر الہند اور مفتی سلمان منصورپوری نائب امیر منتخب

نئی دہلی: جمعیت علمائے ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی کو ملک بھر سے نامور علمائے کرام کی موجودگی اور امارت شرعیہ ہند کے ایک اہم اجلاس میں متفقہ طور پر 5 واں امیر الہند منتخب کیا گیا۔ قابل ذکر ہے کہ امیر الہند حضرت مولانا قاری سید محمد عثمان منصور پوری 21 مئی 2021 ء کو علالت کے بعد فوت ہوگئے۔ تب سے یہ عہدہ خالی تھا ، جس کی وجہ سے ملک کے مشہور علمائے کرام اور امارت شرعیہ ہند کے ذمہ داروں کا ایک اہم اجلاس ہفتہ کے روز دہلی میں واقع جمعیت علماء ہند کے صدر دفتر میں ہوا ، جس میں مولانا سید ارشاد مدنی کو متفقہ طور پر 5 واں امیر الہند منتخب کیا گیا جبکہ قاری محمد عثمان منصورپوری کے بڑے بیٹے مفتی سید سلمان منصورپوری کو نائب امیر الہند بنایا گیا۔اس میٹنگ میں بنیادی طور پر جمعیت علماء ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی ، جمعیت علماء ہند کے قومی صدر مولانا محمود مدنی اور دارالعلوم دیوبند کے مہتمم مفتی ابوالقاسم نعمانی وغیرہ شریک تھے۔
بتادیں کہ امارت شرعیہ ہند 1986 میں تشکیل دی گئی تھی اور پہلے امیر الہند مولانا حبیب الرحمن اعظمی ، 1992 میں جمعیت علمائے ہند کے سابق قومی صدر مولانا سید اسعد مدنی ، سابق رکن پارلیمنٹ اور 2006 میں دارالعلوم دیوبند کےمہتمم مولانا مرغوب الرحمن بنے تھےان کے بعدجمعیت علماء صدر اور دارالعلوم دیوبندکے کارگزارمہتمم مولانا قاری عثمان منصور پوری 2011 سے 21 مئی 2021 تک اس عہدے پر فائز رہے ۔  قابل ذکر ہے کہ امیر الہند امارت شرعیہ ہند کے امیر ہیں ، جس کا کام چاند نظر آنے کی تصدیق ، یتیموں اور بیواؤں کو پنشن اور ان کی مدد ،اصلاح معاشرہ اور مسلمانوں کے مسائل کے حل پرتوجہ دینا ہے۔