24.2 C
نئی دہلی
Image default
قومی خبریں

ماسک اورسینٹائزرکابحران،مودی جواب دیں

ایرانی اورپیوش گوئل کوہٹائیں
وزیراعظم بتائیں ،کب تک دستیابی ہوگی :کانگریس کاسخت حملہ
نئی دہلی:کانگریس نے منگل کو ملک میں وینٹی لیٹر کی شدید کمی کے لیے وزیر تجارت پیوش گوئل اور کپڑا وزیر اسمرتی ایرانی کو ذمہ دارٹھہراتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو اپنے ان دونوں وزراء کو برطرف کرنا چاہیے۔پارٹی کے سابق صدر راہل گاندھی نے بحران سے نمٹنے کے لیے حکومت کی تیاریوں پر بھی سوال کھڑا کیا اور کہا کہ اس وائرس کے خطرے کو پہلے ہی سنجیدگی سے لینا چاہیے تھا۔انہوں نے ماسک اور گلبس کی کمی کے دعوے والے ایک ٹویٹس ریٹوئٹ کرتے ہوئے کہاہے کہ مجھے دکھ ہو رہا ہے کیونکہ اس صورت حال سے بچاجا سکتاتھا۔گاندھی نے کہاہے کہ ہمارے پاس تیاری کاوقت تھا۔ہمیں اس خطرے کو زیادہ سنجیدگی سے لیناچاہیے تھا اور بہتر تیاری ہونی چاہیے تھی۔ کانگریس کے چیف ترجمان رندیپ سرجیوالا نے ویڈیوکے ذریعے جاری ایک بیان میں کہاہے کہ محترم وزیر اعظم، 22 مارچ کو ملک کے ڈاکٹر، نرس اور صحت کے اہلکاروں کے لیے پورے ملک نے تالی اورپلیٹ تو بجائی پر وہ پوچھ رہے ہیں کہ ملک کے رکھوالوں کی حفاظت کب ہوگی؟ اس ملک کے ڈاکٹر، نرس اور صحت کے اہلکاروں کی حفاظت سے کی گئی مجرمانہ غفلت کی سزا کب اور کسے دیں گے، براہ مہربانی ملک کو اس کا جواب دیں۔ انہوں نے دعویٰ کیاہے کہ یکم فروری سے 2 مارچ، 2020 یعنی 31 دن تک وزارت صحت اور کپڑا وزارت نے صحت کی حفاظت کے آلے (پرسنل پروٹیکشن )بنانے کے معیار ہی مقرر نہیں کیے اور ایک دوسرے کے پالے میں گیندپھینکتے رہے۔نتیجہ یہ ہواکہ پرسنل پروٹیکشن کا بننا ہی شروع نہیں ہوپایا۔ وزارت تجارت نے پانچ دن پہلے تک یعنی 19 مارچ،2020 تک بھارت سے وینٹی لیٹر، ماسک،ورل یعنی گاؤن اور ان کے خام مال کی برآمد بیرون ملک کو دس گنا قیمت میں جاری رکھا۔ کانگریس لیڈر نے پوچھا کہ اب جب وینٹی لیٹر اور ماسک کی شدیدکمی ہے تو یہ سب کب تک دستیاب ہوگا؟سرجیوالا نے کہا کہ وزیر اعظم کو اپنے ان دونوں وزراء کوبرطرف کرنا چاہیے۔انہوں نے یہ سوال بھی کیاہے کہ ملک کے ڈاکٹر، نرس اور صحت کے اہلکاروں اورکوروناسے دوچار مریضوں کی صحت سے کھلواڑ کی سزا کب اور کسے دیں گے؟ ملک جانناچاہتا ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment