معروف شاعر کامران غنی صبا کی بتیا آمد پر ادبی سنگم نے سجائی محفل شعروسخن

بتیا:گزشتہ روز اردو کے معروف شاعر اور نتیشور سنگھ کالج، مظفر پور میں اردو کے اسسٹنٹ پروفیسر کامران غنی صبا بتیا تشریف لائے۔اس موقعے سے بتیا کی قدیم ادبی تنظیم ادبی سنگم نے ان کے اعزاز میں ایک شعری محفل کا اہتمام مقامی سجاد پبلک اردو لائبریری میں کیا۔پروگرام کی صدارت ادبی سنگم کے صدر جناب ابو الخیر نشتر نے کی جبکہ نظامت کے فرائض ادبی سنگم کے سکریٹری ڈاکٹر نسیم احمد نسیم نے انجام دیئے۔ڈاکٹر نسیم نے مہمان شاعر کا تعارف کراتے ہوئے کہا کہ جناب کامران غنی صبا نے بہت کم عرصے میں اپنی عمدہ شاعری اور نثر نگاری کے ذریعے ملک گیر شہرت حاصل کی ہے۔نیز انھوں نے اپنے والد محترم سینئر صحافی ڈاکٹر ریحان غنی صاحب کی بیباک اور حق پر مبنی تحریروں کا بھی اثر لیا ہے۔ان کا ایک شعری مجموعہ پیام صبا کے نام سے منظر عام پر آچکا ہے۔اس موقعے سے معروف شاعر ڈاکٹر ظفر امام نے کہا کہ وہ ایک بہترین ناظم مشاعرہ کے طور پر بھی مقبول ہیں۔مقبول اور ہردلعزیز شاعر حسن امام قاسمی کی پیش رفت کی بدولت سجی اس محفل میں مشہور ہندی بھوجپوری کوی گورکھ مستانہ کے علاوہ ظفر امام، افتخار وصی کریک، محمد قمر الزماں قمر،ذاکر حسین ذاکر،اختر حسین،مشتاق احمد مضطر،حسن اکرام،سریش گپت ،حسن امام قاسمی نے اپنے بہترین اشعار سے سامعین کو محظوظ کیا۔زبیر احمد،فیرز احمد،جاوید عالم، وصی اختر وغیرہ کی شرکت نے اس محفل کو باوقار بنایا۔اخیر میں صدر محفل ابو الخیر نشتر صاحب کے کلام اور صدارتی خطبے کے ساتھ محفل کا اختتام ہوا۔