معروف سماجی رہنما سوامی اگنی ویش کا انتقال

نئی دہلی:سماجی کارکن اور آریہ سماج کے معروف مذہبی رہنما سوامی اگنی ویش کو طبیعت خراب ہونے کے بعد دہلی کے ایک ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا جہاں ان کا انتقال ہوگیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق آریہ سماج کے رہنما سوامی اگنی ویش کو نئی دہلی کے انسٹی ٹیوٹ آف لیور اینڈ بائلری سائنسز میں بھرتی کرایاگیا تھا۔ وہ لیورسے متعلق بیماریوں میں مبتلا تھے اور ملٹی آرگن فلیور کی وجہ سے منگل کے دن سے ہی وینٹی لیٹر پر تھے۔

اکثر موضوعِ بحث رہنے والے اور سماجی و سیاسی مسائل پر کھل کر اپنی رائے کا اظہار کرنے والے سوامی اگنی ویش نے 1970 میں آریہ سبھا نامی سیاسی پارٹی بنائی تھی۔1977میں وہ ہریانہ اسمبلی حلقے سے ایم ایل اے منتخب ہوئے اور ہریانہ سرکار میں وزیر تعلیم بھی رہے۔1981میں انھوں نے بندھو مکتی مورچہ نامی تنظیم بنائی تھی۔ سوامی اگنی ویش2011میں اناہزارے کی قیادت میں چلنے والی بدعنوانی مخالف تحریک کا بھی حصہ رہے،بعد میں کچھ اختلافات کی وجہ سے وہ اس سے الگ ہوگئے تھے۔ سوامی اگنی ویش نے ریالٹی شو بگ باس میں بھی حصہ لیا تھا۔ پچھلے دنوں این آرسی سی اے اے مخالف تحریک کو بھی ان کی حمایت حاصل تھی اور ملک کے مظلوم،پسماندہ طبقات اور اقلیتوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کے خلاف وہ کھل کر اپنے موقف کا اظہار کرتے تھے،جس کی وجہ سے اکثر و بیشتر دائیں بازو کی شدت پسند جماعتوں کے نشانے پر رہتے تھے۔