مرکزی وزیر اٹھاولے نے ذات پات پر مبنی مردم شماری کی اپیل کی

پال گھر:مرکزی وزیر رامداس اٹھاولے نے ملک میں ذات پات پر مبنی مردم شماری کی اپیل کی ، لیکن ساتھ ہی یہ بھی واضح کیا کہ ان کامطالبہ ذات پات کو فروغ دینے کا نہیں ہے۔ مہاراشٹر میں پال گھر ضلع کے وکرم گڑھ میں ایک قبائلی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی وزیر برائے سماجی انصاف وتفویض اختیارات اٹھاولے نے مطالبہ کیاہے کہ مراٹھا برادری کو دوسری ذاتوں اوربرادریوں کے لیے ریزرویشن میں ردوبدل کیے بغیرریزرویشن دیا جائے۔سپریم کورٹ نے گذشتہ سال مراٹھابرادری کو تعلیم اور ملازمتوں میں ریزرویشن فراہم کرنے والے 2018 مہاراشٹرا ایکٹ کے نفاذ پر روک دی تھی ، لیکن واضح کیاہے کہ ان لوگوں کی حیثیت میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے جو اس قانون کا فائدہ اٹھا چکے ہیں۔اٹھاولے نے کہاہے کہ مختلف ذاتوں سے متعلق اعداد و شمار کو آنے والی مردم شماری میں شامل کیا جانا چاہیے ، تاکہ لوگ جان سکیں کہ ان کی حیثیت کل آبادی میں کیا ہے۔ اس کا ہدف ذات پات کو فروغ دینا نہیں ہے۔انہوں نے کہاہے کہ ان کی ریپبلکن پارٹی آف انڈیا بے روزگاروں کے لیے پانچ ایکڑ اراضی کا مطالبہ کرنے کے لیے مختلف ریاستوں اور اضلاع کے صدر دفاتر میں 25 فروری کومظاہرے کرے گی۔