مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر ظفرالدین کا انتقال

حیدرآباد:مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر ظفر الدین کا آج حیدرآباد میں انتقال ہو گیا۔ اُن کی عمر 50 سال سے کچھ اوپر تھی۔ ڈاکٹر ظفر الدین گیا بہار کے رہنے والے تھے۔ اعلیٰ تعلیم انہوں نے دہلی یونیورسٹی سے حاصل کی تھی۔کئی برس دہلی کے روزنامہ قومی آواز سے وابستہ تھے۔ کیریئر کا آغاز انہوں نے قومی آواز میں کاتب کی حیثیت سے کیا تھا۔ کتابت سے ترقی کرتے ہوئے پہلے ڈسک پر آئے اور سب ایڈیٹر بنائے گئے اس کے بعد مزید ترقی کرکے وہ بیورو میں پہنچے ۔ اس دوران تعلیمی سلسلہ جاری رکھا اور ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی ـ ان کا ایم فل کا مقالہ بابا نیاز حیدر کی حیات و خدمات پر تھا جسے نیاز حیدر سے متعلق کتابوں میں ایک نمایاں درجہ حاصل ہوا۔
بعد ازاں جب مانو کا قیام عمل میں آیا تو وہ پروفیسر بن کر حیدرآباد چلے گئےـ ادھر دو سے زائد دہائیوں سے ان کا قیام حیدرآباد میں ہی تھا۔آپ کو مولانا آزاد نیشنل یونیورسٹی میں کافی اونچا مقام حاصل تھا۔آپ نے شعبہ ترجمہ کے قیام کے بعد اس کی ذمے داری قبول کر لی تھی اور یونیورسٹی کے علمی و تحقیقی جریدے "ادب و ثقافت ” کی ادارت کی ذمے داریاں بھی نبھا رہے تھےـ