حملہ سیاسی دباؤکانتیجہ،ممتابنرجی نے ذاکرحسین کی عیادت کی

کولکاتہ:مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے اپنی کابینہ کے ساتھی ذاکر حسین پر ہونے والے بم حملے کو ایک سیاسی سازش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کچھ لوگوں پر ان کی پارٹی میں شامل ہونے کے لیے دباؤ ڈالا گیا ۔ زخمی وزیر سے ملاقات کے بعد ممتا بنرجی نے ریاستی وزیر محنت پر ہونے والے حملے کا موازنہ 1990 میں پنجاب کے وزیراعلیٰ بنت سنگھ کے قتل سے کیا اور کہا ہے کہ اس واقعے کے لیے ریلوے ذمہ دار ہے۔ممتا نے کہا ہے کہ بدھ کے روز مغربی بنگال کے وزیر ذاکر حسین پر بم حملہ ایک سازش کا حصہ تھا۔ ان کا حملہ ریلوے کے احاطے میں ہوا ہے ، لہٰذا مرکزی ادارہ جوابدہ ہوجاتاہے۔وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ ذاکرحسین ایک بڑے بزنس مین ہیں۔وہ ایک بڑی بیڑی فیکٹری چلاتے ہیں۔ عینی شاہدین کے ذریعہ یہ منصوبہ بند حملہ تھا۔انہوں نے کہا ہے کہ یہ ایک خوفناک دھماکہ تھا۔ میں حیران رہ گئی۔ یہ بنت سنگھ حملے کی طرح ہے ۔