ممتابنرجی نے مرکز پر امتیازی سلوک کاالزام لگایا

نئی دہلی:وزیراعظم نریندر مودی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے تمام ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ سے بات چیت کی۔ اس میٹنگ میں،مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتابنرجی نے مرکز پر سیاست کرنے کا الزام عائد کیا۔ ممتا بنرجی نے مرکز پرکورناکے بہانے سیاست کرنے کا الزام لگایا۔ ذرائع نے بتایا کہ ممتابنرجی نے کہاہے کہ مرکزی حکومت ہر کام کا فیصلہ پہلے ہی کرتی ہے ، ہم سے کبھی نہیں پوچھتی۔ اس دوران ، ممتابنرجی نے مرکز پر امتیازی سلوک کا الزام بھی عائد کیا۔اپوزیشن کاالزام ہے کہ ریاستیں اپنے بقایاجی ایس ٹی مانگتی ہیں اورخصوصی پیکیج مانگتی ہیں تووزیراعظم اس پردھیان ہی نہیں دیتے ہیں۔ذرائع نے بتایاہے کہ میٹنگ میں ، پی ایم مودی نے وزرائے اعلیٰ سے کہا کہ ہماری کوشش ہونی چاہیے کہ جو کچھ بھی ہو ، لیکن ایک انسانی ذہن موجود ہے اور ہمیں کچھ فیصلوں کو بھی تبدیل کرنا ہوگا۔ ریاستیں مل کر کام کر رہی ہیں۔ کابینہ کے سکریٹری مستقل رابطے میں ہیں۔ زیادہ توجہ دیں،سرگرمی میں اضافہ کریں۔ وزیر اعظم نے کہاہے کہ متوازن حکمت عملی کے ساتھ آگے بڑھیں اور اس پر کام کریں کہ چیلنجزکیا ہیں اور کیا راستہ ہے۔ سب کی تجاویز کے ذریعہ رہنما خطوط مرتب کیے جائیں گے۔وزیر اعظم نے کہاہے کہ ہندوستان خود کو اس بحران سے بچانے میں بڑی حد تک کامیاب ہوا ، ریاستوں نے اپنی ذمہ داری نبھائی۔ اگر دو گز ڈھیلے ہوں گے تو بحران بڑھ جائے گا۔ ہم کس طرح لاک ڈاؤن کو نافذ کررہے ہیں یہ ایک بہت بڑا عنوان رہا ہے ، ہم سب نے ایک اہم کردار ادا کیا۔ یہ چیلنج اب بھی گاؤں تک نہیں پہنچنا چاہیے۔ تمام معاشی موضوعات پر اپنی تجاویز دیں۔