میک ان انڈیاوالے چین سے خریداری نہیں روکتے:راہل گاندھی

نئی دہلی:کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے گذشتہ چند سالوں میں چین سے درآمدات میں اضافے کو لے کر منگل کو بی جے پی حکومت کو نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ میک ان انڈیاکی بات ہو رہی ہے ، لیکن چین سے خریداری جاری ہے ۔انہوں نے ٹویٹ کیاہے کہ حقائق جھوٹ نہیں بولتے ہیں۔ بی جے پی کا کہنا ہے کہ میک ان انڈیا ہے اور فرام چین۔کانگریس کے لیڈرمنموہن سنگھ حکومت کے دوران ہندوستان کی کل درآمدات میں چین کی کمی اور نریندر مودی حکومت میں چین کے حصہ میں مبینہ طور پر اضافے سے منسلک ایک گراف بھی شیئرکیاگیاہے۔ قابل ذکر ہے کہ ان دنوں لداخ میں لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی) پر ہندوستان اور چین کے مابین تعطل ہے۔ 15۔16 جون کی درمیانی رات ، دونوں ممالک کے فوجیوں کے مابین پْرتشدد جھڑپوں میں 20 ہندوستانی فوجی ہلاک ہوگئے۔ چینی فریق کو بھی نقصان اٹھانا پڑا۔ اس پر ، وزیراعظم سے سوالات کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم ، آپ کو سچ کہنا ہے ، ملک کو بتانا ہوگا ، گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ اگر آپ کہتے ہیں کہ زمین چلی گئی ہے اور اصل میں زمین چلی گئی ہے تو چین کو فائدہ ہوگا۔انہوں نے مزیدکہاہے کہ،ہمیں ان کے ساتھ مل کر لڑنا ہے ، انہیں اٹھا کر واپس پھینکنا ہے ، پھر ہمیں سچ بتانا ہوگا۔ بلا خوف وخطر ، آپ کہتے ہیں کہ ہاں ، چین نے زمین لے لی ہے اور ہم کارروائی کرنے جارہے ہیں ، پورا ملک آپ کے ساتھ کھڑا ہے۔ اور آخری سوال۔ہمارے شہدا کو اسلحہ کے بغیر کس نے بھیجا ، اور کیوں؟

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*