مہاراشٹر:بی جے پی پھر کر سکتی ہے سیندھ ماری کی کوشش،اگلے دوتین ماہ میں حکومت بنانے کا دعویٰ

ممبئی:مہاراشٹر کی سیاست میں ہلچل اچانک تیز ہوگئی ہے۔ ایک ہی دن میںبی جے پی کے دو رہنماؤں کے بیانات سے قیاس آرائیاں بڑھ گئیں۔ مہاراشٹر کے سابق وزیر اعلی اور اپوزیشن لیڈر دیویندر فڑنویس نے کہا ہے کہ بی جے پی کی اگلی حکومت کی تاج پوشی گزشتہ سال کی طرح دن نکلنے سے پہلے نہیں بلکہ صحیح وقت پر ہوگی۔ فڑنویس نے پیر کے روز میڈیا سے گفتگوکے دوران یہ بیان دیا جو منگل کو سامنے آیا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ مہاراشٹر وکاس آگھاڑی حکومت سے عوام ناراض ہیں۔ ان کی حکومت گرنے کے بعد ہم حکومت بنائیں گے۔ گزشتہ سال مہاراشٹر میں بی جے پی کی حکومت قائم ہونے کے ٹھیک ایک سال بعد فڑنویس کا بیان سامنے آیا ہے۔ 23 نومبر 2019 کو فڑنویس نے نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے رہنما اجیت پوار کی حمایت سے حکومت تشکیل دی تھی، حالانکہ ان کی حکومت صرف 80 گھنٹے چل سکی ۔گزشتہ سال صبح کے وقت حکومت بنانے کا اعلان کرتے ہوئے فڑنویس نے حیران کردیا تھا ، اس بار وہ کہہ رہے ہیں کہ اب وہ صحیح وقت پر حلف لیں گے۔ پیر کو فڑنویس کے بیان سے قبل مرکزی وزیر راؤصاحب دانوی پاٹل نے کہا تھا کہ بی جے پی اگلے 2 سے 3 ماہ میں مہاراشٹر میں حکومت بنائے گی۔ پارٹی نے اس کے لئے تیاریاں بھی کرلی ہیں۔ شیوسینا کے رہنما سنجے راوت نے کہا کہ ہماری حکومت باقی 4 سال مکمل کرے گی۔ اپوزیشن لیڈر مایوسی میں ایسی باتیں کر رہے ہیں، کیونکہ ان کی ساری کوششیں ناکام ہو گئی ہیں۔ وہ بخوبی واقف ہیں کہ مہاراشٹر کے عوام حکومت کے ساتھ ہیں۔ گزشتہ سال قائم ہونے والی 3 روزہ حکومت کی آج برسی ہے۔