مہاراشٹر میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 115 پولیس اہلکار کورونا وائرس سے متاثر

ممبئی:ملک میں کورونا وائرس کافی تیزی سے پھیل رہا ہے۔ گزشتہ چند دنوں میں انفیکشن کے کیس پولیس اہلکار، ڈاکٹرس، طبی عملے اور میڈیااہلکار میں تیزی سے پھیلتے دیکھ سکتے ہیں۔ ظاہر ہے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے پورے ملک میں لاک ڈاؤن جاری ہے۔ ایسے میں عام لوگ تو ان کے گھروں میں بند ہیں لیکن یہ لوگ عوام کی خدمت کے لئے سڑک پر ڈیوٹی ادا کر رہے ہیں۔حالانکہ اس دوران اب وہ خود بھی اس خطرناک بیماری کا شکار ہو رہے ہیں۔مہاراشٹر میں محض گزشتہ 24 گھنٹوں میں 115 پولیس کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی مہاراشٹر میں کورونا وائرس سے متاثر پولیس اہلکاروں کی تعداد بڑھ کر 342 تک پہنچ گئی ہے۔وہیں ملک کی قومی دارالحکومت دہلی میں اب تک 54 پولیس اہلکار متاثرہ پائے گئے ہیں۔ آپ کو یاد ہوگا گزشتہ ماہ ممبئی میں 53 صحافی بھی کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے تھے۔ حالانکہ ان میں سے 31 صحافی صحت مند ہوکر اب اپنے گھر لوٹ چکے ہیں۔وہیں سی آر پی ایف کے جوانوں میں بھی کورونا وائرس پھیل گیا ہے۔ سی آر پی ایف میں کورونا وائرس سے متاثرہ جوانوں کی تعداد بڑھ کر 122 ہو گئی ہے۔ جبکہ 150 جوانوں کی کورونا وائرس رپورٹ آنے کا انتظار ہے۔گزشتہ ہفتے دہلی کے روہنی واقع امبیڈکر ہاسپٹل کے 32 ہیلتھ ورکس کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے۔ ان میں ڈاکٹر اور نرس بھی شامل ہیں۔ سوال اٹھتا ہے کہ اچانک اتنے ہیلتھ ورکرس کورونا وائرس سے مثبت کیسے پائے گئے۔ دراصل کچھ دنوں پہلے اسپتال میں کورونا وائرس سے متاثرہ ایک حاملہ عورت آئی تھی۔ اس نے اپنی بیماری کو چھپایا تھا۔ کچھ دنوں کے بعد اسپتال میں ہی اس کی موت ہوگئی۔کورونا وائرس سے متاثرہ حاملہ خاتون نے معلومات چھپا کراپنی جان تو گنوائی ہی دی لیکن ساتھ ساتھ دیگر 32 لوگوںمیں بھی وائرس پھیلا دیا۔ اس سے پہلے دہلی کے ہی بابو جگ جیون رام اسپتال میں طبی عملے کے 65 افراد کورونا وائرس سے متاثرہ پائے گئے تھے۔مہاراشٹر میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 115 پولیس اہلکار کورونا وائرس سے متاثر
ممبئی:
ملک میں کورونا وائرس کافی تیزی سے پھیل رہا ہے۔ گزشتہ چند دنوں میں انفیکشن کے کیس پولیس اہلکار، ڈاکٹرس، طبی عملے اور میڈیااہلکار میں تیزی سے پھیلتے دیکھ سکتے ہیں۔ ظاہر ہے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے پورے ملک میں لاک ڈاؤن جاری ہے۔ ایسے میں عام لوگ تو ان کے گھروں میں بند ہیں لیکن یہ لوگ عوام کی خدمت کے لئے سڑک پر ڈیوٹی ادا کر رہے ہیں۔حالانکہ اس دوران اب وہ خود بھی اس خطرناک بیماری کا شکار ہو رہے ہیں۔مہاراشٹر میں محض گزشتہ 24 گھنٹوں میں 115 پولیس کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی مہاراشٹر میں کورونا وائرس سے متاثر پولیس اہلکاروں کی تعداد بڑھ کر 342 تک پہنچ گئی ہے۔وہیں ملک کی قومی دارالحکومت دہلی میں اب تک 54 پولیس اہلکار متاثرہ پائے گئے ہیں۔ آپ کو یاد ہوگا گزشتہ ماہ ممبئی میں 53 صحافی بھی کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے تھے۔ حالانکہ ان میں سے 31 صحافی صحت مند ہوکر اب اپنے گھر لوٹ چکے ہیں۔وہیں سی آر پی ایف کے جوانوں میں بھی کورونا وائرس پھیل گیا ہے۔ سی آر پی ایف میں کورونا وائرس سے متاثرہ جوانوں کی تعداد بڑھ کر 122 ہو گئی ہے۔ جبکہ 150 جوانوں کی کورونا وائرس رپورٹ آنے کا انتظار ہے۔گزشتہ ہفتے دہلی کے روہنی واقع امبیڈکر ہاسپٹل کے 32 ہیلتھ ورکس کورونا وائرس سے مثبت پائے گئے۔ ان میں ڈاکٹر اور نرس بھی شامل ہیں۔ سوال اٹھتا ہے کہ اچانک اتنے ہیلتھ ورکرس کورونا وائرس سے مثبت کیسے پائے گئے۔ دراصل کچھ دنوں پہلے اسپتال میں کورونا وائرس سے متاثرہ ایک حاملہ عورت آئی تھی۔ اس نے اپنی بیماری کو چھپایا تھا۔ کچھ دنوں کے بعد اسپتال میں ہی اس کی موت ہوگئی۔کورونا وائرس سے متاثرہ حاملہ خاتون نے معلومات چھپا کراپنی جان تو گنوائی ہی دی لیکن ساتھ ساتھ دیگر 32 لوگوںمیں بھی وائرس پھیلا دیا۔ اس سے پہلے دہلی کے ہی بابو جگ جیون رام اسپتال میں طبی عملے کے 65 افراد کورونا وائرس سے متاثرہ پائے گئے تھے۔