لوجہاد کا شوشہ،امتیاز جلیل کا طنز:بی جے پی نقوی،شاہنواز حسین کے خلاف کارروائی کرکے مثال قائم کرے

اورنگ آباد:بین مذاہب شادیوں پرہنگامہ آرائی کے درمیان اترپردیش حکومت کے منظور کردہ آرڈیننس کے بارے میں بی جے پی پرحملہ کرتے ہوئے مجلس کے رکن پارلیمنٹ امتیاز جلیل نے بی جے پی کو چیلنج کیاہے کہ وہ اپنے لیڈروں مختارعباس نقوی اور شاہنواز حسین کے خلاف کاروائی کرکے ایک مثال قائم کریں۔ اس آرڈیننس کے مسودے کا مقصد جبری طور پر شادی بیاہ پر پابندی عائدکرنا ہے جو خلاف ورزی کرنے والوں کے لیے 10 سال قیدکی سہولت فراہم کرتا ہے۔اورنگ آباد کے ممبرپارلیمنٹ نے نامہ نگاروں کوبتایا کہ بی جے پی اترپردیش میں یہ قانون لے کر آئی ہے۔ ہم وزیر اعظم نریندر مودی سے پوچھنا چاہتے ہیں کہ لوجہادکس نے شروع کیا؟ کیا بی جے پی کے وزیر مختار عباس نقوی کے ذریعہ کیاگیالو جہاددرست ہے؟ بی کیا بی جے پی کے سینئر لیڈرشہنواز حسین نے لوجہاد کیا ہے؟ اگر ایسا ہے تو بی جے پی پہلے ان کے خلاف کارروائی کرکے ایک مثال قائم کرے۔