Home قومی خبریں لاؤڈ اسپیکر تنازعہ: پونے کی5 مساجد کی اپیل، عید پر ڈی جے نہ بجائیں، ضرورت مندوں کیلئے خرچ کریں پیسہ

لاؤڈ اسپیکر تنازعہ: پونے کی5 مساجد کی اپیل، عید پر ڈی جے نہ بجائیں، ضرورت مندوں کیلئے خرچ کریں پیسہ

by قندیل

پونے:مذہبی مقامات پر لاؤڈ سپیکر کے استعمال پر جاری تنازعہ کے درمیان پونے کی پانچ مساجد کی انتفاضہ کمیٹی اور کمیونٹی کے کچھ دیگر افراد نے عید کے دوران ڈی جے بجانے پر پابندی عائد کر دی ہے اور اس کے لیے جمع ہونے والی رقم غریبوں اور ضرورت مندوں میں استعمال کرنے کا فیصلہ کیا۔ان لوگوں نے کمیونٹی کے نوجوانوں سے کہا ہے کہ وہ 2 مئی کو عید کے موقع پر اونچی آواز میں ڈی جے نہ بجائیں۔مہاراشٹر کے علاقے لوہیا نگر میں واقع بھارتیہ انجمن قادریہ مسجد کے امام مولانا محسن رضا نے کہا کہ اونچی آواز میں ڈی جے کے برے اثرات سب کو معلوم ہے، یہ بیماروں اور کمزور دلوں کے لیے اچھا نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس لئے ا ہم نے علاقے میں پانچ مساجد کی ایک کور کمیٹی بنائی ہے اور ان کے اماموں اور دیگر اراکین اور کمیونٹی کے دیگر بزرگ لوگوں سے میٹنگ کی ہے اور عید کے دوران ڈی جے نہ بجانے کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈی جے کے لیے جمع ہونے والی رقم غریبوں اور ضرورت مندوں کی مدد کے لیے استعمال کی جائے گی۔ مساجد میں لاؤڈ سپیکر کی تنصیب کے تنازعہ کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ علاقے کی پانچوں مساجد میں شور کی آلودگی سے متعلق سپریم کورٹ کے رہنما خطوط پر عمل کیا جا رہا ہے اور اذان کے دوران آواز کو ہمیشہ کم رکھا جاتا ہے۔اسی کور کمیٹی کے رکن اور اردو کے استاد یونس سلیم شیخ کہتے ہیں کہ ایسی کمیٹی کا قیام سماجی مسائل سے نمٹنے کی سمت میں ایک اچھا قدم ہے۔ مقامی رہائشی اور سابق کونسلر یوسف شیخ نے کہا کہ عید کی تقریبات میں ڈی جے نہ بجانے کے فیصلے کو اچھا رسپانس ملا ہے اور وہ امید کرتے ہیں کہ شہر کے دیگر حصوں میں بھی ایسا ہی کیا جائے گا۔

You may also like

Leave a Comment