لاک ڈاؤن میں نرمی کا مطلب اصول کی خلاف ورزی نہیں: ہرش وردھن

نئی دہلی:مرکزی وزیرصحت ڈاکٹر ہرش وردھن نے منگل کودہلی میں حکام کے ساتھ جائزہ میٹنگ کی ہے۔ اس دوران وائرس سے الگ ڈینگو، ملیریا، چکن گنیا جیسے آنے والے چیلنجوں کو لے کر بات ہوئی۔لاک ڈاؤن 3.0 میں ملی چھوٹ کو لے کر وزیر صحت نے کہاہے کہ اگر ملک کے کچھ حصوں میں کچھ چھوٹ دی گئی ہے تواس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ اصول کی پیروی نہیں کریں گے۔ہر کسی کو سوشل ڈسٹنیسنگ پرعمل کرناضروری ہے اور ماسک پہنناہوگا۔وزیرصحت نے کہاہے کہ جب تک کوئی ویکسین نہیں آتی، تب تک ایسا ہی اقدام کرناہوگا۔بھارت میں وائرس کے خطرے کو لے کر انہوں نے کہا کہ بھارت میں ابھی تک کمیونٹی ٹرانسمیشن نہیں ہواہے، ایسے میں بھارت درست سمت میں آگے بڑھ رہاہے۔ ساتھ ہی وزیر صحت نے کہاہے کہ وباکی وجہ سے لوگوں میں کافی تبدیلی آئی ہے، زندگی بھی مکمل طور پر تبدیل ہوگئی ہے۔لاک ڈاؤن بڑھانے کو لے کر وزیر صحت نے کہاہے کہ معیشت کے ساتھ ساتھ لوگوں کی صحت بھی ضروری ہے، ایسے میں کچھ سختی کے ساتھ کچھ راحت بھی دی گئی ہے۔وزیرنے کہاہے کہ ہر فیصلے پر عمل ہوناچاہیے تاکہ معاملات میں اچھال نہ آ پائے۔