لاک ڈاؤن گیا ہے،کورونا نہیں گیا،مزیداحتیاط کی ضرورت،مودی کا ملک سے خطاب

نئی دہلی:پی ایم مودی نے آج ملک کے نام خطاب کیا۔اپنے خطاب میں انھوں نے کہا کہ ہمیں یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ لاک ڈاؤن جا چکا ہے ، وائرس نہیں گیا ہے۔ پچھلے 7-8 مہینوں میں ، ہر ہندوستانی کی کوششوں کی وجہ سے ہم آج ہندوستان میں بگڑتی ہوئی صورتحال کو مزید خراب ہونے سے روک سکے ہیں۔لیکن جن ممالک نے تھوڑی لاپرواہی برتی ،آج ان کی حالت خراب ہے۔ہم نے بہت سی تصویریں اورویڈیوزدیکھی ہیں جن میں لوگ لاپرواہ نظرآرہے ہیں،لیکن یادرہے کہ ابھی اوراحتیاط کی ضرورت ہے۔میں آپ کوصحت منددیکھناچاہتاہوں۔ابھی تہوارکاوقت ہے۔مزیداحتیاط کرنی چاہیے۔کئی کوروناویکسین پرہم کام کررہے ہیں۔جب یہ آئے گی توہرایک شہری کوملے گی۔واضح ہوکہ جے پی نڈاکی ریلی میں گیامیں ہزاروں لوگ بغیرماسک اورسماجی فاصلے کی پرواہ کے بغیرجمع تھے ۔بہارالیکشن میں ہرجگہ یہی صورت حال نظرآرہی ہے۔اس کے علاوہ ممبئی میں بی جے پی لیڈران خودمندرکھولنے کے لیے ہنگامہ کررہے ہیں۔بنگال بی جے پی صدرنے کہہ دیاکہ کوروناختم ہوگیاہے،ممتابنرجی حکومت زبردستی بندکررہی ہے۔وہ احتجاج کوروک رہی ہے۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ ہم ایک مشکل وقت سے آگے بڑھ رہے ہیں۔ تھوڑی سی لاپرواہی ہماری کوششوں کوبربادکر سکتی ہے ، ہماری خوشی کو داغدارکرسکتی ہے۔ زندگی اور چوکسی کی ذمہ داریاں بیک وقت چلیں گی ، تب ہی زندگی میں خوشی ہوگی۔ آج میں میڈیا اور سوشل میڈیاکے ذریعے ساتھیوں سے کہناچاہتا ہوں کہ آپ بیداری لانے کے لیے ان قوانین پرعمل کرنے کے لیے جتنا عوامی آگاہی مہم چلائیں گے۔ آپ کی طرف سے ملک کے لیے بہت بڑی خدمت ہوگی۔وزیراعظم نے کہاہے کہ آج ملک میں بازیابی کی شرح اچھی ہے۔ دنیا کے وسائل سے مالا مال ممالک کے مقابلے میں ہندوستان اپنے زیادہ سے زیادہ شہریوں کی زندگیاں بچانے میں کامیاب ہو رہا ہے۔کوویڈ وباکے خلاف جنگ میں ٹیسٹ کی بڑھتی ہوئی تعداد ایک بڑی طاقت رہی ہے۔ خدمت کے منتر کے بعدہمارے ڈاکٹر ، نرسیں اتنی بڑی آبادی کی بے لوث خدمت کررہی ہیں۔ ان تمام کوششوں کے بیچ ، لاپرواہی کا وقت نہیں ہے۔ اب یہ مان لینے کاوقت نہیں ہے کہ کورناچلا گیا ہے ، یا اب کورونا سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔