لاک ڈاؤن -3 کے بعد کیا ہوگا،حکومت کے پاس کیا حکمت عملی ہے:سونیاگاندھی

نئی دہلی:کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بدھ کو سوال کیا کہ حکومت کا پلان کیا ہے،لاک ڈائون کتنے دنوںتک جاری رہے گا؟ کانگریس کے اہم ترجمان رندیپ سرجیوالا کے مطابق سونیا نے پارٹی حکومت والی ریاستوں کے وزرائے اعلی کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ہوئی میٹنگ میں کہاکہ 17 مئی کے بعد کیا؟ 17 مئی کے بعد کس طرح ہو گا؟ ہندوستان حکومت یہ فیصلہ کرنے کے لئے کون سا طریقہ اپنا رہی ہے کہ لاک ڈائون کتنا لمبا چلے گا۔ اجلاس میں ان کی بات کی حمایت کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ نے کہاکہ جیسا کہ سونیا جی نے کہا ہے کہ ہمیں یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ لاک ڈائون -3 کے بعد کیا ہوگا؟کسانوں کو لے کر سونیا نے کہاکہ ہم اپنے کسانوں خاص طور پنجاب اور ہریانہ کے کسانوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ جنہوں نے تمام پریشانیوںکے باوجود گیہوں کی شاندار پیداوار کے ساتھ کھانے کی حفاظت کو یقینی بنایا ہے۔ سرجیوالا کے مطابق اجلاس میں راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے کہاکہ جب تک وسیع مراعات پیکج نہیں دیا جاتا اس وقت تک ریاست اور ملک کیسے چلے گا؟ ہمیں 10 ہزار کروڑ روپئے کی آمدنی کا نقصان ہوا ہے۔ ریاستوں نے وزیر اعظم سے پیکج کے لئے مسلسل زور دیا ہے، لیکن ہمیں اب تک حکومت ہند سے کچھ نہیں پتہ چلا۔ویڈیو کانفرنسنگ کے دوران پنجاب کے وزیر اعلی امریندر سنگھ نے کہاکہ ‘دہلی میں بیٹھے لوگ زمینی حقیقت جانے بغیر کوروناوائرس کے زون کی درجہ بندی کر رہے ہیں، جو تشویش ناک ہے۔ سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے کانگریس وزرائے اعلی کے اجلاس میں کہا کہ فنانس کے معاملے میں ریاستوں کی حالت انتہائی خراب ہے لیکن مرکز ی حکومت انہیں کوئی فنڈز مختص نہیں کر رہی ہے۔