یوم ِ آئین پروگرام کا حزب اختلاف نے بائیکاٹ کیا، لوک سبھا اسپیکر کا اظہارِ افسوس

نئی دہلی: لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا نے پارلیمنٹ کے سنٹرل ہال میں یوم آئین کے پروگرام کا اپوزیشن کے ذریعہ بائیکاٹ کیے جانے کو افسوس ناک اور بد قسمتی قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ وہ پیر کو مشترکہ طورپر ہونے والی بزنس ایڈوائزری کمیٹی اورکل جماعتی اجلاس میں تمام جماعتوں کے لیڈروں سے بات چیت کریں گے ۔مسٹر برلا نے یوم آئین کے پروگرام کے بعد نامہ نگاروں سے غیررسمی بات چیت میں کہاکہ 29نومبر کو پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کے پہلے دن صبح مشترکہ طورپر کل جماعتی اور ایڈوائزری کمیٹی کی میٹنگ بلائیں گے جس میں تمام جماعتوں کے لیڈروں کے ساتھ پارلیمنٹ کی کارروائی چلانے کے تمام موضوعات پر بات چیت کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ حال ہی میں شملہ میں اختتام پذیر پریزائیڈنگ افسروں کی میٹنگ میں اس بات پر اتفاق کیا گیا تھا کہ پارلیمنٹ میں صدر اور اسمبلی میں گورنروں کی تقاریر اور وقفہ سوالات کا بائیکاٹ یا رکاوٹ نہیں ڈالی جانی چاہیے لیکن یوم آئین کے پروگرام میں پھرسے وہی ہوا۔ انہوں نے اس پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اگر کسی سیاسی جماعت کو کسی بات پر اعتراض ہے تو اسے اسپیکر سے کہنا چاہیے۔ ہم ان کی بات سنتے اور ان کی توقع کو پوری کرنے کی کوشش کرتے۔ اگر ان کی توقع پوری نہیں ہوتی تو وہ بائیکاٹ کرسکتے تھے لیکن اس طرح سے بائیکاٹ سے دل دکھی ہوتا ہے۔ یہ میری ذمہ داری ہے، میں ان سے بات کروں گا۔