ایل جے پی میں بغاوت دور کرنے کی تمام کوششیں ناکام،چراغ پاسوان کا سیاسی کریئر داؤ پر

پٹنہ:چراغ پاسوان کی لوک جن شکتی پارٹی میں بغاوت ہوئی ہے۔ اس کی قیادت ان کے چچا پشوپتی کمار پارس کررہے ہیں۔ حالت یہ ہے کہ چراغ اب اپنی ہی پارٹی میں الگ تھلگ ہیں اورپارٹی کے چھ میں سے پانچ ممبران پارلیمنٹ نے لوک سبھا اسپیکر کوایک خط لکھ کر انہیں الگ گروپ کے طور پر تسلیم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ معاملہ کے لیے قابل عمل حل تلاش کرنے کے چراغ کی کوششوں میں اب تک موجود ہیں چھے لوجپا ارکان پارلیمنٹ پانچ باغی ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ چراغ کو ہٹا دیا اور ان کی جگہ ان کی ماں کوپارٹی کلی سربراہ بنانے کا فارمولا سمیت ناکام ہوگیا۔پشوپتی کمار پارس کو قائد منتخب کیاگیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ بحران کا حل تلاش کرنے کی کوشش میں ، پارٹی کے رکن پارلیمنٹ اور چچا پشوپتی کمار کی دہلی کی رہائش گاہ پر پارس سے ملنے آئے تھے ، لیکن ان سے ملاقات کیے بغیر ہی انہیں وہاں سے چلے جانا پڑا۔ پشوپتی پارس تقریباََ ڈھائی گھنٹے انتظار کرنے کے بعد بھی نہیں مل پائے۔ اس سے قبل چراغ پاسوان ان سے ملنے کے لیے چچاکے گھر پہونچے تو طویل انتظار کے بعد ہی گیٹ کھلا ۔