لالویادونے نتیش حکومت کے گھوٹالے شمارکرائے،نظم ونسق کی بدحالی پرگھیرا

نئی دہلی:بڑی تعداد میں مزدور بہار واپس لوٹ رہے ہیں۔کافی آناکانی کے بعداب حکومت دوسری ریاستوں سے واپس لانے کی کوشش کر رہی ہے۔ دریں اثنا، آر جے ڈی کے سربراہ اور بہار کے سابق وزیراعلیٰ لالوپرسادیادو نے ریاستی حکومت پر نشانہ لگایاہے۔ انہوں نے بہارکے وزیراعلیٰ نتیش کمار اورنائب وزیر اعلی سشیل مودی پر چٹکی لیتے ہوئے انہیں نقل مکانی، بے روزگاری، خراب تعلیم، صحت اور نظم ونسق کی بدحالی کے لیے ذمہ دارٹھہرایاہے۔لالویادونے ہفتہ کواپنی ٹویٹس میں لکھاہے کہ پلٹو-سلٹوکے گلے میں اب 15 برسوں کا ڈھول پڑاہے۔ ذرا زور زور سے بجاکراپنی کامیابیاں گنائو،نقل مکانی، بے روزگاری، بدحال تعلیم، صحت اور نظم ونسق کی بدحالی، مظفرپور اسکینڈل، وسرجن سمیت 55 گھوٹالے،چمکی بخار، سیلاب اورمینڈیٹ ڈکیتی جیسی کامیابیاں ہیں۔لالویادو پہلے ہی کئی بار ریاست کے وزیراعلیٰ نتیش کمار اور ان کی حکومت کی سخت تنقیدکرچکے ہیں۔ لالویادونے حال ہی میں ایک ٹویٹ کر کے کہاتھاکہ یو پی اے حکومت میں ہم نے بہار کو 1 لاکھ 44 ہزارکروڑ روپے کی رقم دلائی۔ 60 ہزار کروڑکی ریلوے فیکٹری دی۔ ہمارے دیے پیسے سے نتیش کمار نے چہرہ چمکایا، جب خوداین ڈی اے میں تھے بہار کو پھوٹی کوڑی بھی نہیں دلائی۔ ترقیاتی کاموں میں ہم نے کبھی تنگ سیاست نہیں کی۔