لکشد یپ: مقامی لوگوں سے مشاورت کے بغیر نہیں بنے گا قانونی مسودہ،وزیر داخلہ کی یقین دہانی

نئی دہلی:وزیر داخلہ امیت شاہ سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے لکشدیپ کے رکن پارلیمنٹ محمد فیضل نے کہا کہ امت شاہ نے مقامی لوگوں سے مشورہ کئے بغیر کوئی قانون نہ بنانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ دراصل لکشدیپ میں رہنے والے لوگ نئے قوانین کی مخالفت کر رہے ہیں،اس لئے مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ لکشدیپ کے لیے نئے مسودہ قانون کو مقامی نمائندوں سے مشورہ کئے بغیر حتمی شکل نہیں دی جائے گی۔ رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ امت شاہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ جو بھی قانون زیرغور ہیں، انہیں لکشدیپ بھیجا جائے گا جہاں ضلعی پنچایت میں مقامی نمائندوں سے مشاورت کی جائے گی۔ نیز حتمی شکل دینے سے پہلے لوگوں کی رضامندی پر بھی غور کیا جائے گا۔ ساتھ ہی ممبر پارلیمنٹ فیصل نے مرکزی علاقے کے منتظم پردیپ پٹیل کو ہٹانے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔ فیضل کے مطابق پردیپ پٹیل
ان قوانین پر زور دے رہے ہیں، جن کی تعمیل کرنا یہاں بسنے والے لوگوں کے لیے بہت مشکل ہے۔ رکن پارلیمنٹ فیصل نے صحافیوں سے گفتگو کے دوران بتایا کہ ان کی پارٹی این سی پی کے صدر شرد پوار نے بھی اس معاملے پر بات کرنے کے لیے شاہ اور وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کا وقت مانگا ہے۔