کوئلہ گھوٹالے میں ترنمول لیڈروں کے خلاف کارروائی جاری،سی بی آئی-ای ڈی نے 15 مقامات پر مارے چھاپے

کولکاتا:مغربی بنگال میں کوئلہ گھوٹالہ کی آنچ اب تاجروں ، افسران اور ترنمول لیڈروں تک جا پہنچی ہے۔ سی بی آئی اور ای ڈی نے جمعہ کے روز ترنمول کے قریبی تاجروں کے مقامات کی تلاشی لی اور چھاپے مارے۔ جنوبی کولکاتہ ، آسنسول میں واقع گھر اور دفاتر میں چھاپے مارے گئے۔سی بی آئی اور ای ڈی نے 15 مقامات پر چھاپے مارے ہیں۔ تفتیش میں انکشاف ہوا ہے کہ کوئلے کی اسمگلنگ کے دوران متعدد افسروں اور رہنماؤں نے بھی رشوت لی تھی۔ نیوز ایجنسی اے این آئی نے بتایا کہ جلد ہی ان افسران اور مبینہ رہنماؤں کے ٹھکانوں پر چھاپے مارے جاسکتے ہیں۔خیال رہے کہ اسی معاملہ میں پچھلے سال دسمبر کے شروع میں کولکاتہ کے سی اے گنیش باگاریہ کے دفتر پر چھاپہ مارا گیا تھا۔ یہ کارروائی سی بی آئی ٹیم نے کی تھی۔اس معاملہ میں دو دن پہلے سی بی آئی نے وزیر اعلی ممتا بنرجی کی بہو روجیرہ بنرجی اور روجیرہ کی بہن مانیکا گمبھیر سے پوچھ گچھ کی۔ دونوں سے رقم کے لین دین اور ذرائع آمدنی کے بارے میں معلومات حاصل کی گئی ہیں۔ ذرائع کے مطابق اب سی بی آئی ان سب کے بینک کھاتوں اور اثاثہ جات کی چھان بین کررہی ہے۔ ای ڈی کو بھی تفتیش میں شامل کیا گیا ہے۔کوئلے گھوٹالے میں ترنمول قائدین پر الزام عائد کیا گیا ہے۔