’کیوں ڈراتے ہو زنداں کی دیوارسے؟‘،دہلی سرحدکی تصویرشیئرکرکے پرینکاگاندھی کاشاعرانہ طنز

نئی دہلی:تینوں نئے زرعی قوانین کو واپس لینے کے مطالبے جاری ہیں۔ادھرکانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکاگاندھی نے دہلی بارڈرپرپولیس کے ذریعہ متعدد سطح کے سیکیورٹی محاصرے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا ہے اورمشہور اردو شاعر حبیب جالب کی مشہور نظم کا مصرعہ شیئر کرتے ہوئے پوچھاہے کہ’ کیوں ڈراتے ہو زنداں کی دیوارسے؟‘ سوشل میڈیاپرانھوں نے دہلی بارڈرپرکی کئی تصویروں کو شیئرکرتے ہوئے لکھا ہے کہ کیوں ڈراتے ہو زنداں کی دیوارسے ؟ لال قلعے میں 26 جنوری کو ہونے والے تشددکے بعد دہلی پولیس نے کسانوں کو دہلی آنے سے روکنے کے لیے سنگھو ، ٹکری اور غازی پور بارڈر پر بہت سی رکاوٹیں کھڑی کیں۔ سڑکوں پرخاردار تاراورسپائیکس ہیں۔ بہت ساری جگہوں پر پولیس نے 20 سطحی حفاظتی رنگ تیار کیا ہے۔یہاں کاشتکاروں نے زرعی قوانین کےخلاف احتجاج میں آج ملک بھر میں چکا جام کی کال دی تھی۔ یہ جام دوپہر 12 سے شام 3 بجے کے درمیان کیاگیا۔ اس کے پیش نظر دہلی پولیس نے دہلی میں سیکیورٹی کے بھاری انتظامات کیے تھے۔پوری دہلی-این سی آر میں 50000پولیس اہلکار اور پیرا ملٹری فورس کے جوان تعینات کردیے گئے تھے۔