کسانوں کی تحریک کوبدنام کرنے کے خلاف احتجاج،پرکاش سنگھ بادل نے پدم ایوارڈواپس کیا

نئی دہلی:زرعی قوانین کے خلاف ملک میں کسانوں کا احتجاج بڑھتا ہی جارہا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ایوارڈ واپس کرنے کا عمل بھی شروع ہو گیا ہے۔ پنجاب کے سابق وزیراعلیٰ اور اکالی دل کے سینئر لیڈرپرکاش سنگھ بادل نے زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے اپنا پدم وبھوشن ایوارڈ واپس کردیا ہے۔ ان کے علاوہ اکالی دل لیڈر سکھدیو سنگھ دھندسا نے اب کہا ہے کہ وہ اپناپدم بھوشن ایوارڈ واپس کردیں گے۔مودی پرکاش سنگھ بادل کے پیرچھوکرآشیروادلیتے رہے ہیں۔دیکھنایہ ہے کہ کیابی جے پی آئی ٹی سیل انھیں بھی ’’ایوارڈواپسی گینگ ‘‘میںشمارکرتاہے یانہیں۔پرکاش سنگھ بادل نے صدر رام ناتھ کووندکوتقریباََ تین صفحات پر مشتمل ایک خط لکھا ، جس میں زرعی قوانین کی مخالفت کرتے ہوئے کسانوں پر کارروائی کی مذمت کی گئی اوراپنااعزاز واپس دیا گیا۔اپنے پدم وبھوشن کو واپس کرتے ہوئے سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرکاش سنگھ بادل نے لکھاہے کہ میں اتنا غریب ہوں کہ میرے پاس کسانوں کے لیے قربانی دینے کے علاوہ اور کچھ نہیں ، میں جو کچھ بھی ہوںکسانوں کی وجہ سے ہوں۔ ایسی صورتحال میں اگر کسانوں کی توہین ہوتی ہے ، تو پھر کسی بھی طرح کے اعزازکاکوئی فائدہ نہیں ۔پرکاش سنگھ بادل نے لکھا ہے کہ کسانوں کے ساتھ جو دھوکہ ہوا ہے اس نے انہیں بہت تکلیف دی ہے۔ جس طرح سے کسانوں کی تحریک کو غلط نقطہ نظرسے پیش کیا جارہا ہے وہ تکلیف دہ ہے۔