کسان تحریک:دہلی آنے والے کئی راستے بند،ٹریفک پولیس نے جاری کی ایڈوائزری

نئی دہلی:مرکز کے زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کے احتجاج کی وجہ سے بہت ساری سڑکیں عام لوگوں کے لیے بند کردی گئیں ہیں۔ دہلی-نوئیڈا لنک روڈ کو بھی بند کردیا گیا ہے۔ لوگوں کو دہلی آنے کے لیے لنک روڈ کے بجائے ڈی این ڈی استعمال کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ کسان تحریک کے پیش نظر بہت سارے راستے بند ہونے کی وجہ سے لوگوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ دہلی ٹریفک پولیس نے عام لوگوں کے لیے ٹریفک ایڈوائزری جاری کی ہے۔ ٹریفک پولیس نے ٹویٹ کیاکہ غازی آباد سے دہلی جانے والی این ایچ 24 پر غازی پور بارڈر بھی کسانوں کے احتجاج کی وجہ سے بند کردیا گیا ہے۔ لوگوں کو دہلی آنے کے لیے این ایچ 24 کا استعمال نہ کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے بلکہ دہلی آنے کے لیے اپسارا، بھوپرا اور ڈی این ڈی استعمال کرنے کو کہا گیا ہے۔ کسانوں کے نئے زرعی قوانین کو واپس لینے کے مطالبے کے پیش نظر سنگھو چنڈی، لامپو ، پیائو مانیاری کی سرحدیں ابھی بھی بند ہیں۔ این ایچ -44 بھی دونوں طرف سے بند ہے۔ دہلی ٹریفک پولیس نے لوگوں کو صافی آباد، سبولی، این ایچ۔8، بھوپورہ بارڈر، اپسارا بارڈر یا پیریفرل ایکسپریس وے کا استعمال کرنے کا مشورہ دیا۔ دھنس، ڈورالہ، کاپاشیرا، راجوکری این ایچ۔8، بیجواسان / بج گھیڈا، پالم وہار اور دہلی اور ہریانہ کے درمیان ڈنڈہیرا بارڈر کھلےہوے ہیں ۔ دہلی ٹریفک پولیس نے ٹویٹ کیاکہ بڈوسرائے بارڈر صرف ہلکی گاڑیوں جیسے کاروں اور دو پہیہ گاڑیوں کے لیے کھلا ہے۔ جھٹکارا بارڈر صرف دو پہیئوں کے لیے کھلا ہے۔