کسان احتجاج پرپابندی لگائی جائے،سپریم کورٹ میں درخواست داخل

نئی دہلی:کسان تحریک کوکوروناکی آڑمیں ختم کرنے کی کوشش جاری ہے ۔ ایک پی آئی ایل سپریم کورٹ میں دائر کی گئی ہے جس میں درخواست کی گئی ہے کہ مرکزی حکومت کو تمام ریاستوں اور مرکزی علاقوں کو ہدایت نامہ جاری کرنے کی ہدایت کی جائے۔رہنما خطوط میں یہ کہا جاناچاہیے کہ اس وبا کا خاتمہ ہونے تک ان کی ریاست میں کسی بھی طرح کے مظاہرے کی اجازت نہیں ہوگی۔درخواست میں کورونا وبا کے پیش نظر دہلی اور دہلی بارڈر پر احتجاج کرنے اور مظاہرہ کرنے والوں کو ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اس درخواست پر پیر کو سماعت ہونی تھی جو اب جمعرات کے لیے ملتوی کردی گئی ہے۔ موجودہ وبا کا حوالہ دیتے ہوئے ایک اور عرضی سپریم کورٹ میں دائر کی گئی ہے ، کہ دہلی-این سی آر کی بلاتعطل تحریک میں ہنگامی خدمات کو یقینی بنایاجانا چاہیے اور دہلی-این سی آر کو ملانے والی شاہراہ پر کسی قسم کی رکاوٹ کی ضرورت نہیں ہے۔ اس مداخلت کی درخواست ایس کے ایم فاؤنڈیشن نے اپنے معتمد سدھیر مشرا کے توسط سے دائر کی تھی۔کسانوں کاکہناہے کہ خودپولیس نے کئی راستے بندکررکھے ہیں۔کسانوں نے پولیس سے اسے کھولوانے کے لیے بھی کہاہے۔