خصوصی ٹرینوں میں 1200 کی بجائے 1700 مسافر سوارہوں گے

نئی دہلی:لاک ڈاؤن کے دوران زیادہ سے زیادہ تارکین وطن کو گھر پہنچانے کی کوشش میں ریلوے نے اب خصوصی ٹرینوں میں 1200 کی جگہ 1700 مسافروں کو بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے اور تین مقامات پر ان ٹرینوں کااسٹاپ ہوگا۔ریلوے کی جانب سے جاری حکم میں،ریلوے زون کو متعلقہ ریاستوں میں منزل کے علاوہ تین جگہوں پر ٹرینوں کے اسٹاپ کے لیے کہاگیاہے۔ریاستی حکومتوں کے اصرار پریہ فیصلہ کیاگیاہے۔اس میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ٹرین میں مسافرین کی تعداداس میں موجود نشستوں کی تعداد کے برابر ہونی چاہیے۔ایسے میں سوال یہ ہے کہ سوشل ڈسٹنسنگ کہاں گئی ؟ ۔خصوسی ٹرینوں میں 24 ڈبے ہیں اور ہر ڈبے میں 72 مسافروں کو لے جانے کی صلاحیت ہے۔سماجی فاصلے کے پروٹوکول پر عمل کرنے کے لیے فی الحال ہر ڈبے میں 54 مسافروں کولے کرلے جایاجارہاہے۔ریلوے نے یکم مئی سے اب تک پانچ لاکھ مسافروں کو ان کی منزل تک پہنچایاہے۔ایک سینئر افسرنے اس اقدام کے بارے میں معلومات دیتے ہوئے بتایاہے کہ ریلوے کے پاس روزانہ 300 ٹرینیں چلانے کی صلاحیت ہے اور ہم اس سے زیادہ سے زیادہ بڑھاناچاہتے ہیں۔اگلے چند دنوں میں ہم چاہتے ہیں کہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں مزدوروں کوان کے گھروں تک پہنچایاجائے اوراس کے لیے ہم نے ریاستوں سے منظوری بھیجنے کوکہاہے۔