کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے- نزار قبانی

ترجمہ:نایاب حسن

تم کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے کہ میری خوب صورتی میں اضافہ ہوجائے
کیوں کہ تمھاری محبت کے بغیر مجھ میں حسن نہیں آسکتا
تم کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے کہ میری انگلیاں سنہری ہوجائیں
اور میری پیشانی پر نور ہوجائے
تم کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے کہ میرے اندر انقلاب آئے
اور میں گیہوں کا سرسبز کھیت بن جاؤں یا کھجوروں کا باغ
ابھی کہو اور کسی تردد سے کام نہ لو
کہ بعض خواہشوں کے اظہار میں تاخیر نہیں کرنی چاہیے
کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے کہ میری پاکیزگی بڑھ جائے
اور میرے اشعار فضا میں انجیل بن کر تحلیل ہوجائیں
اگر تم نے مجھ سے محبت کی تو میں دنیا کا کلینڈر بدل دوں گا
میں کچھ موسموں کو ختم کرکے نئے موسموں کا اضافہ کروں گا
میرے ہاتھوں پرانے زمانے کا خاتمہ ہوجائے گا
اور میں ایک نئی مملکت بساؤں گا،’’مملکتِ نسواں‘‘
کہو کہ مجھے تم سے محبت ہے کہ میرے قصیدے نکھر جائیں
اور میری تحریروں میں الہامی اثر پیدا ہوجائے
اگر تم میری محبوبہ بن جاؤ تو میں بادشاہ بن جاؤں گا
پھر سوار و پیادہ دنیا کے تمام طاقت وروں کو ٹھکانے لگادوں گا
تمھیں احساسِ شرم سے دوچار ہونے کی ضرورت نہیں،کیوں کہ یہی موقع ہے
جب میں قبیلۂ عاشقاں کا پیمبر بن سکتا ہوں

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*