’جس ملزم کوسشیل مودی تلاش کررہے تھے،اسے وزیربنادیا‘،میوہ لال پر آرجے ڈی نے نتیش کو گھیرا

 

پٹنہ:بہار حکومت کے وزراکا محکمہ تقسیم ہوگیا۔ وزیر اعلی نتیش کمار نے ہوم اور انتظامی محکموں کو اپنے پاس رکھا ہوا ہے ، جبکہ ڈپٹی سی ایم ترکیشور پرساد کے پاس محکمہ خزانہ ، شہری ترقیات کے ساتھ ساتھ محکمہ آئی ٹی اور ماحولیات بھی موجودہیں۔ انہیں سشیل مودی کے تمام محکمے دیئے گئے ہیں۔ اس تقسیم کے حوالے سے ایک تنازعہ کھڑا ہوا ہے۔دراصل وزیراعلیٰ نتیش کمار نے میوہ لال چودھری کو جے ڈی یو کوٹہ سے وزیر بنا دیا ہے۔ میوہ لال پراسسٹنٹ پروفیسروں کی بھرتی میں دھاندلی کا الزام ہے۔ ان پرمقدمات بھی درج ہیں اور انہیں جے ڈی یو سے بھی باہر کیاگیاتھا۔معاملہ عدالت میں ہے۔اس کے بعد بھی ، نتیش کمار نے نہ صرف میوہ لال کو وزیر بنایا ، بلکہ وزارت تعلیم کی اہم ذمہ داری بھی دی۔اس پر تنقیدکرتے ہوئے ، راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) نے ٹویٹ کیا ہے کہ جے ڈی یوکے بدعنوان ایم ایل اے کوسشیل مودی ڈھونڈ رہے تھے۔انہیں بدعنوانی کے بھیشم پیتا نے وزارتی عہدہ دیاہے۔ یہ 60 گھوٹالوں کے سرپرست نتیش کمارکادوہراکردار ہے۔ یہ شخص کرسی کے لیے کسی بھی نچلی سطح پرگر سکتا ہے۔