20 C
نئی دہلی
Image default
بین الاقوامی خبریں

جاپان کروز جہاز سے ہندوستانیوں کی واپسی کے لیے ہر ممکن مدد کریں گے:ہندوستانی سفارت خانہ

ٹوکیو:ہندوستان کورونا وائرس انفیکشن کی وجہ سے جاپان کے ساحل پر الگ تھلگ کھڑے کروز جہاز میں موجود ہندوستانیوں کو پیر سے شروع ہونے والے آخری ٹیسٹ میں صحت مند پائے جانے کے بعد وطن لانے میں ہر ممکن مدد کرے گا۔یہ معلومات ٹوکیو میں واقع ہندوستانی سفارت خانے نے دی۔جاپان کے ساحل پر اس ماہ کے شروع میں کھڑے ڈائمنڈ شہزادی نامی جہاز پر کل 3711 افراد سوار ہیں۔ان میں 132 کے عملے کے رکن اور 6 مسافروں سمیت کل 138 ہندوستانی سوار ہیں جن میں سے تین لوگوں کے کوروناوائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔اس دوران جہاز کورانا وائرس (کووڈ 19) سے متاثرہ لوگوں کی تعداد اتوار کو 355 تک پہنچ گئی۔ہندوستانی سفارت خانے نے ٹویٹ کرکے بتایاکہ جہاز 17 فروری سے کورونا وائرس کے انفیکشن کا آخری ٹیسٹ کیا جائے گا اور یہ اگلے کئی دنوں تک جاری رہے گا۔ سفارت خانے نے کہاکہ امید ہے کہ بہادری سے حالات کا سامنا کر رہے ہندوستانی شہری ٹیسٹ میں انفیکشن سے آزاد پائے جائیں گے اور انہیں وطن جانے کی اجازت ملے گی۔ٹوکیو میں واقعہ ہندوستانی سفارت خانے تمام ممکنہ مدد فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔ سفارت خانے نے ہفتہ کو بتایا تھا کہ کورونا وائرس سے متاثر تین لوگوں کی صحت میں بہتری آ رہی ہے۔ہندوستانی مشن نے ٹویٹ کیا تھاکہ یہ مطلع کرکے خوشی ہو رہی ہے کہ کورونا وائرس انفیکشن کا علاج کرا رہے تین ہندوستانیوں کی صحت میں بہتری آئی ہے اور جہاز پر ہندوستانیوں کے متاثر ہونے کے نئے کیس نہیں آئے ہیں۔سفارت خانے نے بتایا کہ الگ تھلگ مرکز میں رہنے کی مدت ختم ہونے پر ہندوستانیوں کو جہاز سے جلد از جلد اتارنے اور ان کی فلاح و بہبود کے لئے جاپان حکومت اور جہاز کی انتظامیہ سے بحث کی جا رہی ہے۔ہندوستانی سفارت خانے نے جہاز پر موجود ہندوستانیوں کو بھی ای میل کے ذریعے بھروسہ دیا ہے کہ ان کی ہر ممکن مدد کی جائے گی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment