جامعہ رحمانی مونگیرکا اجلاس دستار بندی کل، ہزاروں افراد کی شرکت متوقع

مونگیر:جامعہ رحمانی مونگیرکے عظیم الشان اجلاس دستار بندی کی تیاری آخری مرحلہ میں ہے، جامعہ رحمانی خانقاہ مونگیر سج دھج کر پورے طور پر آنیوالے مہمانوں کے لیے تیار ہے، امید ہے اجلاس میں ملک کے مختلف صوبوںاور ریاست بہارسے مخلصین، متوسلین اور فرزندان توحید کی ہزاروں تعداد شریک ہوگی۔ اس موقع پر مفکراسلام حضرت مولانا محمد ولی رحمانی کے جانشین جامعہ رحمانی کے سرپرست امیرشریعت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی کے ہاتھوں جامعہ رحمانی کے فارغ ہونے والے۸۵؍علما ء وحفاظ کے سروںپر دستار فضیلت باندھی جائے گی، مشاہیر علماء کرام اور مشائخ عظام کا خطاب ہوگا اورامیر شریعت  مولانا احمد ولی فیصل رحمانی ملت کو پیغام دیں گے۔ جامعہ رحمانی مونگیر ملک کا مشہور اور صوبہ کاممتاز ومایۂ ناز ادارہ ہے، اس کامیاب ادارہ کو وقت کے عظیم مصلح بانی ندوۃ العلماء لکھنؤ، قاطع قادیانیت حضرت مولانامحمد علی مونگیریؒ نے ۱۹۲۷ء میں  قائم فرمایا، جو ۱۹۳۴ ء کے قیامت خیز زلزلہ میں بند کردیا گیا، اور پھر ۱۹۴۲ء میں بانی آل انڈیا مسلم پرسنل لابورڈ امیر شریعت مولانا منت اللہ رحمانی نور اللہ مرقدہ کے ذریعے اس کی نشأۃ ثانیہ ہوئی،حضرت مولانا مونگیریؒ کے ہاتھوں لگایاہؤا یہ پودا بہت جلد تناور درخت بن گیا،اورعالم ربانی مفکراسلام حضرت مولانا محمد ولی صاحب رحمانی ؒکے زیر نگرانی ان کی کامل توجہ کے نتیجہ میں ترقیات کے منازل طے کرتاہؤا یہ ادارہ تعلیم وتربیت کے میدان میں اپنی بہتر خدمات کے بنا پر باوقاربن گیا، اور علمی دنیا میں قدر کی نگاہوںسے دیکھا جانے لگا۔اور اب یہ ادارہ حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی کی زیر سرپرستی ترقی کی شاہراہ پر چل رہا ہے۔خبر ہے کہ جامعہ رحمانی کے مخلصین محبین اور عام مسلمان محبوب اورمؤقرادار ہ اس کے عظیم الشان اجلاس دستار بندی میں شرکت فرمائیںگے ،۲۷؍نومبر کی صبح تک لوگ اپنے احباب اور مخلصین کے ساتھ خانقاہ رحمانی آجائیںگے،یہاں آکر اپنے بزرگوں کی مغفرت کیلئے تلاوت قرآن اورذکرووردکا اہتما م کریں گے اور بعد نماز مغرب اجلاس دستاربندی میں شریک ہوکر علماء کرام کی بصیرت افروز تقریروںسے فائدہ اٹھائیںکے اور جامعہ رحمانی کے فارغین کی دستاربندی کا خوشنمامنظراپنی نگاہوںسے دیکھیںاورجانشیں مفکر اسلام حضرت مولانا محمد ولی صاحب رحمانی ؒپیر طریقت حضرت امیرشریعت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی صاحب مدظلہ کے حیات بخش پیغام کو سنیں اور اس پر عمل کریں اور اس کی روشنی میںدین و دنیا کی نعمتوں اور سعاد توں سے اپنے دامن کو بھریں اورآخرت کے لیے رحمت و مغفرت کی راہ ہموار کریں گے ۔ اجلاس میں عورتوں اوربچوں کو شرکت کی چونکہ اجازت نہیں ہے، اس لیے اس موقعہ پر آنے والے عورتیں اوربچے ہرگزاپنے ساتھ لے کر نہ آئیں۔