جامعہ ملیہ اسلامیہ کے 20سے زائدتدریسی اورغیرتدریسی ملازمین کوروناکی نذر

ملازمین کے اہل خانہ کو جلد مالی واجبات فراہم کریں گے:انتظامیہ
نئی دہلی:جامعہ ملیہ اسلامیہ (جے ایم آئی)کوویڈ 19کے باعث اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ملازمین کے اہل خانہ کو مالی واجبات فراہم کرے گی۔اپریل کے بعد سے دہلی میں کوویڈ۔19 کی لہرمیں تیزی سے اضافے کی وجہ سے بہت سے اسپتالوں میں بیڈ اور میڈیکل آکسیجن کی کمی ہے۔جے ایم آئی کے مطابق اس کے20 سے زیادہ ملازمین بشمول پروفیسرز اور نان ٹیچنگ اسٹاف انفیکشن کے باعث فوت ہوگئے ہیں۔علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے پینتالیس کے قریب تدریسی اورغیرتدریسی ملازمین فوت ہوئے ہیں۔علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے اسٹوڈنٹس یونین کے سابق صدراس پرجانچ کا مطالبہ کررہے ہیں۔جامعہ ملیہ اسلامیہ نے متعلقہ دفاتر سے کہا ہے کہ وہ ہلاک ہونے والے ملازمین کے اہل خانہ کو جائز قانونی واجبات فراہم کرے۔یونیورسٹی نے کہاہے کہ جے ایم آئی کے وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر کی ہدایت پر رجسٹرار نے تمام محکموں / دفاترکے سربراہوں سے کہا ہے کہ وہ متوفی ملازمین سے متعلق دیگر کاغذات بھیجیں تاکہ جلد از جلد ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔یونیورسٹی نے کہاہے کہ متعلقہ دفاتر سے کہا گیا ہے کہ وہ فائلوں کو ترجیحی بنیادوں پر انجام دیں تاکہ ہلاک ہونے والے ملازمین کے اہل خانہ کو جلد سے جلد فائدہ حاصل ہو۔