ہمت ہے توگرفتارکرو،ایف آئی آردرج ہونے پرتیجسوی یادوکاچیلنج

پٹنہ:بہارکے قائد حزب اختلاف تیجسوی یادو نے ریاستی حکومت پر سخت حملہ کیاہے۔تیجسوی یادونے نتیش کمارکوڈرپوک اور’بندھک‘وزیراعلیٰ بتاتے ہوئے کہاہے کہ بہار حکومت نے کسانوں کے خلاف احتجاج کرنے پر ان کے اور ان کے حامیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے۔تیجسوی یادونے چیلنج کیا ہے کہ اگر اس حکومت میں طاقت ہے تو انہیں گرفتار کرے ، بصورت دیگر وہ خود گرفتاری دیں گے۔ تیجسوی یادونے کہاہے کہ وہ کسانوں کے لیے پھانسی پر چڑھنے کو بھی تیارہیں۔ تیجسوی یادو نے اپنے حامیوں کے ساتھ پٹنہ کے گاندھی میدان میں احتجاجی مظاہرہ کیا اور نئے زرعی قوانین کی واپسی کا مطالبہ کیا تھا۔تیجسوی یادونے اس دوران کہا تھا کہ جو شخص محنتی کسان کی بھلائی کے بارے میں نہیں سوچ سکتا ، وہ کبھی بھی انسان اور انسانیت پر یقین نہیں کرسکتا ہے۔ پٹنہ پولیس نے تیجسوی یادوکے اس احتجاج میں شریک 18 حامیوں اور500 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ پولیس نے ان مقدمات کو آئی پی سی اور وبائی قانون کی مختلف دفعات کے تحت درج کیا ہے۔تیجسوی یادو انتظامیہ کی جانب سے کی جانے والی اس ایف آئی آر پر ناراض ہیں۔