ہیلو ٹرمپ‘ پر 100 کروڑ روپیے خرچ کیے، مزدوروں کے لیے مفت ریل سفر کیوں نہیں:پرینکا گاندھی

نئی دہلی:کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مہاجر مزدوروںسے ریلوے کی طرف سے کرایہ لیے جانے کو لے کر پیر کو حکومت پر نشانہ لگایا اور سوال کیا کہ جب ہیلو ٹرمپ پروگرام پر 100 کروڑ روپے خرچ کئے جا سکتے ہیں تو پھر بحران کے وقت مزدوروں کو مفت ریل کے سفر کی سہولت دستیاب کیوں نہیں کرائی جا سکتی؟انہوں نے کہا کہ مزدور ملک کے معمار ہیں۔ مگر آج وہ در در کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ پرینکا نے سوال کیاکہ جب ہم بیرون ملک میں پھنسے ہندوستانی شہریوں کو ہوائی جہاز سے بلا معاوضہ واپس لے کر آ سکتے ہیں،جب ہیلو ٹرمپ پروگرام میں سرکاری خزانے سے 100 کروڑ روپے خرچ ہوسکتے ہیں، جب ریلوے کے وزیر پی ایم کیئرس فنڈ میں 151 کروڑ روپے دے سکتے ہیں تو پھر مزدوروں کو مصیبت کی اس گھڑی میں مفت ریل کے سفر کی سہولت کیوں نہیں دے سکتے؟ کانگریس جنرل سکریٹری نے کہاکہ انڈین نیشنل کانگریس نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ گھر جانے والے مزدوروں کے ریل سفر کا پورا خرچ اٹھائے گی۔غور طلب ہے کہ کانگریس صدر سونیا گاندھی نے پیر کو کہا کہ ان مزدوروں کے لوٹنے پر ہونے والے اخراجات پارٹی کی ریاستی یونٹس برداشت کریں گی۔ انہوں نے ایک بیان میں کہاکہ ‘کانگریس نے مزدوروںکی اس مفت ریل سفر کی مانگ کو بار بار اٹھایا ہے۔ بدقسمتی سے نہ حکومت نے دھیان دیا اور نہ ہی ریل کی وزارت نے۔ اس لیے کانگریس نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ ہر ریاستی کانگریس کمیٹی ہر ضرورت مند مزدور اور کارکن کے گھر جانے کے لیے ریل سفر کا ٹکٹ برداشت کرے گی۔